Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / جھبوا دھماکہ کا اصل ملزم راجندر کسوا کی اہلیہ گرفتار

جھبوا دھماکہ کا اصل ملزم راجندر کسوا کی اہلیہ گرفتار

بی جے پی کے ریاستی صدر کے خلاف کیس درج کرنے کانگریس کا مطالبہ
جھبوا ( مدھیہ پردیش ) ۔ 16 ۔ ستمبر : (سیاست ڈاٹ کام ) : پتیلوار ٹاون میں گذشتہ ہفتہ پیش آئے خوفناک دھماکہ کے سلسلہ میں مطلوب اصل ملزم راجندر کسوا کی اہلیہ کو آج پولیس نے حراست میں لے لیا ۔ جب کہ اس دھماکہ میں 89 افراد ہلاک ہوگئے تھے ۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ مسٹر جی جی پانڈے نے بتایا کہ مفرور راجندر کا پتہ چلانے کے لیے اس کی بیوی پرمیلا سے پوچھ تاچھ کی جارہی ہے ۔ ہفتہ کو پیش آئے دھماکہ کے بعد سے راجندر مفرور ہے ۔ جس کے بارے میں اطلاع دینے پر ایک لاکھ روپئے انعام کا اعلان کیا گیا ۔ ڈسٹرکٹ ایڈیشنل پولیس سپرنٹنڈنٹ اور راجندر کی گرفتاری کے لیے تشکیل دی گئی خصوصی تحقیقاتی ٹیم ( ایس آئی ٹی ) کی سربراہ شریمتی سیما الوا نے بتایا کہ ملزم کے افراد خاندان کو حراست میں لے لیا گیا ہے لیکن ان کے ناموں کا فی الحال انکشاف نہیں کیا جاسکتا ۔ انہوں نے کہا کہ ملزم کی گرفتاری کے لیے تلاشی مہم میں شدت پیدا کردی گئی ہے ۔ جھبوا میں ایک ریسٹورنٹ سے متصل عمارت میں دھماکو اشیاء کا ذخیرہ رکھا گیا تھا ۔ جس کے دھماکہ سے 2 عمارتیں مکمل تباہ ہوگئیں اور کئی ایک مکانات کو نقصان پہنچا ۔

جب کہ ملزم کسوا کا دعویٰ ہے کہ باولیوں کی کھدائی میں دھماکو اشیاء کے استعمال کے لیے اس نے لائسنس حاصل کیا ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ ایک رہائشی عمارت میں دھماکو اشیاء بشمول بھاری مقدار میں جلٹن اسٹکس ( چھڑیاں ) کا ذخیرہ رکھا گیا تھا ۔ جس میں 2 دکانات بھی واقع تھے ۔ ملزم کے دو بھائیوں نریندر اور پھولچند کو کل حراست میں لے لیا گیا۔ دریں اثناء کانگریس لیڈر اور سابق مرکزی وزیر کانتی لال بھوریہ نے ریاستی بی جے پی صدر نندکمار سنگھ چوہان کے خلاف فی الحال کیس درج کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے سٹی کوتوالی پولیس اسٹیشن کے روبرو احتجاجی مظاہرہ کیا ۔ تاہم نند کمار نے بھوپال میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کسوا کو میرے فرزند ڈاکٹر وکرانت کا قریبی دوست ظاہر کیا جارہا ہے جو کہ بالکلیہ غلط اور بے بنیاد ہے ۔ جب کہ بھوریہ نے بتایا کہ محض کسوا کو آر ایس ایس کا حامی قرار دینے پر صدر پردیش کانگریس کے خلاف پولیس نے جب کیس درج کیا ہے تو نندکمار کے خلاف کیوں نہیں ؟

TOPPOPULARRECENT