Sunday , November 19 2017
Home / ہندوستان / جھوٹے الزامات کے تحت ٹی ایم سی قائدین کی توہین روزمرہ کا معمول

جھوٹے الزامات کے تحت ٹی ایم سی قائدین کی توہین روزمرہ کا معمول

ہمیں کسی سے رقومات لینے کی ضرورت نہیں ، اپوزیشن کے پاس پیسہ کہاں سے آتا ہے : ممتا
دم دم ۔ 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ناراڈا اسٹنگ آپریشن پر الجھن و پریشانی کی شکار مغربی بنگال کی چیف منسٹر ممتا بینرجی نے اپوزیشن جماعتوں بی جے پی، کانگریس اور سی پی آئی ایم کے فنڈس کے ذرائع کے بارے میں آج سوال اُٹھایا۔ ممتا نے یہاں ایک ریالی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’جھوٹوں کے الزامات کی بنیاد پر ہماری روزمرہ توہین کی جاتی ہے۔ ہماری رکن پارلیمنٹ کوکیلا (گھوش دستی دار) کو ناراڈا سے رقم حاصل کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ اگر وہ چاہیں تو ایسے 50 ناراڈا خرید سکتی ہیں۔ ہمارے قائدین کو دوسروں سے پیسہ مانگنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ ہم ہندوستان کی ایک انتہائی شفاف اور دیانت دار جماعت ہیں‘‘۔ ممتا بینرجی نے سوال کیا کہ ’’کانگریس ، سی پی آئی ایم اور بی جے پی کی فنڈس کے ذرائع کیا ہیں ، ان کے پاس کروڑہا روپئے ہیں۔ اتنی بھاری رقومات انہیں کہاں سے حاصل ہورہی ہیں۔ ان پارٹیوں کی فنڈنگ کے مسئلہ پر ہم لوک سبھا میں سوال اٹھائیں گے‘‘۔ ممتا بنرجی نے سابق وزیراعظم منموہن سنگھ پر الزام عائد کیا کہ انہوں نے اس بھاری قرض کو معاف کرنے کا وعدہ پورا نہیں کیا جو ٹی ایم سی حکومت کو بائیں بازو کے اقتدار سے ورثہ میں ملا تھا۔ انہوں نے کہا کہ منموہن سنگھ نے 2011ء کے اسمبلی انتخابات کے موقع پر ریالی سے خطاب کے دوران بائیں بازو اقتدار کے خاتمہ پر تمام قرض معاف کرنے کا وعدہ کیا تھا۔

 

مظفر نگر فساد میں زخمی شخص کا انتقال
مظفر نگر 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) 2013 ء کے مظفر نگر فساد میں ایک 40 سالہ شخص لہو لہان ہونے کے بعد کوما میں چلا گیا تھا۔ آج اُس نے آخری سانس لی۔ پولیس نے بتایا کہ فسادات میں زخمی مہر عالم ساکن رحمت نگر کا آج صبح اس کے مکان میں انتقال ہوگیا جس پر حملہ کی شکایت پر پولیس نے نامعلوم افراد کے خلاف کیس درج کیا لیکن ایک بھی ملزم کو گرفتار نہیں کیا گیا۔

 

TOPPOPULARRECENT