جہیز مخالف قانون پر سپریم کورٹ کا فیصلہ افسوسناک : کرت

نئی دہلی ۔ 3 ۔ جولائی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : سی پی آئی ( ایم ) نے سپریم کورٹ کی جانب سے جہیز مخالف قانون پر دئیے گئے فیصلہ کو افسوسناک قرار دیا اور کہا کہ سپریم کورٹ نے جہیز جیسے اہم معاملہ پر موجودہ قانون کو بالکلیہ تحلیل کردیا ۔ سی پی آئی ( ایم ) کی سینئیر لیڈر برنداکرت نے کہا کہ سپریم کورٹ کی جانب سے یہ ایک افسوسناک فیصلہ ہے جس نے جہیز کے خلاف موجودہ قانون کو بے وقعت کردیا ۔ سپریم کورٹ کو یہ اختیارات نہیں ہیں کہ وہ ایک لائق تعزیر جرم کو ناقابل تعزیر جرم میں تبدیل کردے ۔ برنداکرت فاضل عدالت کی جانب سے انسداد جہیز ستانی قانون کے غلط استعمال کے بارے میں عدالت کی جانب سے خیالات کا اظہار کرنے کے بعد اپنے ردعمل کا اظہار کررہی تھیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ ایک ایسے وقت آیا ہے جب بیویاں اس قانون کا فائدہ اٹھا کر کبھی کبھی بے قصور شوہروں کو بھی پھنسا دیتی ہیں ۔ عدالت کا یہ فیصلہ دینا بھی ناقابل فہم ہے کہ پولیس شوہر اور سسرالی رشتہ داروں کو از خود گرفتار نہیں کرسکتی ۔ یاد رہے کہ سپریم کورٹ کا یہ فیصلہ ایک شخص کی جانب سے داخل کردہ شکایت کے بعد دیا گیا ہے ۔ جو بہار کا شہری ہے اور اس نے ادعا کیا تھا کہ انسداد جہیز ستانی قانون کے بل بوتے پر اسے ہراساں کیا جارہا ہے ۔ برنداکرت نے کہا کہ عدالت کے فیصلے سے ان خواتین کے ساتھ ناانصافی ہوئی ہے جو جہیز کے نام پر ظلم و ستم کا شکار ہیں ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت بہار کو اس فیصلہ کو چیلنج کرنا چاہئے ۔

راجستھان میں مانسون کی تاخیر سے آمد ، کئی علاقوں میں شدید بارش
جے پور۔/3جولائی، ( سیاست ڈاٹ کام ) تقریباً 15دنوں کی تاخیر کے بعد مانسون بالآخر راجستھان کے بیکانیر ڈیویژن میں داخل ہوگیا جس سے عوام کو گذشتہ پندرہ دنوں سے جاری شدت کی گرمی سے راحت ملی۔ ریاست کے محکمہ موسمیات کے ڈائرکٹر بی این وشنوئی نے کہا کہ چورو، بیکانیر، جھنجھونو اور ناگور کے علاقوں میں زبردست بارش ہوئی جس کا آغاز صبح سے ہوگیا تھا۔ یاد رہے کہ گذشتہ سال مانسون راجستھان میں 13جون کو داخل ہوا تھا۔

TOPPOPULARRECENT