Tuesday , June 19 2018
Home / سیاسیات / جیسے کو تیسا :این ڈی اے حکومت گورنرس کی تبدیلی کیلئے کوشاں

جیسے کو تیسا :این ڈی اے حکومت گورنرس کی تبدیلی کیلئے کوشاں

نئی دہلی۔ 5 جون (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی زیرقیادت این ڈی اے حکو مت مرحلہ وار انداز میں گورنرس کی تبدیلی کیلئے تیار ہے۔ یو پی اے حکومت نے 2004ء میں جس طرح بی جے پی سے وابستہ سیاست دانوں کو گورنر کے عہدے سے ہٹا دیا تھا، اسی طرح اب مودی حکومت موجودہ گورنرس کو ہٹانے کی تیاری کررہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ بی جے پی قیادت دستوری ماہرین سے مشاورت کے

نئی دہلی۔ 5 جون (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی زیرقیادت این ڈی اے حکو مت مرحلہ وار انداز میں گورنرس کی تبدیلی کیلئے تیار ہے۔ یو پی اے حکومت نے 2004ء میں جس طرح بی جے پی سے وابستہ سیاست دانوں کو گورنر کے عہدے سے ہٹا دیا تھا، اسی طرح اب مودی حکومت موجودہ گورنرس کو ہٹانے کی تیاری کررہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ بی جے پی قیادت دستوری ماہرین سے مشاورت کے بعد یہ قدم اٹھائے گی۔ گورنر کے عہدہ کیلئے سینئر بی جے پی لیڈر مرلی منوہرجوشی ، یشونت سنہا اور وی کے ملہوترا کے نام لئے جارہے ہیں۔ یو پی اے حکومت نے 2004ء میں یوپی ، ہریانہ ، گجرات اور گوا کے گورنرس کو ہٹا دیا تھا۔ حکومت کے اس فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج بھی کیا گیا تھا اور عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا تھا کہ گورنرس ، مرکزی حکومت کے ملازم نہیں ہیں۔

عام آدمی پارٹی لیڈرس انجلی دامنیا اور پریتی مینن استعفیٰ سے دستبردار
ممبئی۔ 5 جون (سیاست ڈاٹ کام) عام آدمی پارٹی کے ممبئی کے قائدین انجلی دمانیہ اور پریتی مینن نے پارٹی سے استعفیٰ دے دیا لیکن اندرون چند گھنٹے اپنا موقف بدلتے ہوئے انہوں نے آج نئی ریاستی عاملہ کی تشکیل کا یقین دلایا اور کہا کہ یہ شفاف اور وسیع تر عمل ہوگا تاکہ پارٹی کارکنوں کے ساتھ رابطے کو یقینی بنایا جائے۔ عام آدمی پارٹی رفقاء کو جاری کردہ مکتوب میں انجلی نے کہا کہ وہ عام آدمی پارٹی کے ساتھ اپنا تعلق ختم کررہی ہیں ۔ سماجی کارکن سے سیاست داں بننے والی انجلی نے اس فیصلے کی کوئی وجہ نہیں بتائی۔ لوک سبھا انتخابات میں انہوں نے بی جے پی لیڈر نتن گڈکری کے خلاف ناگپور سے مقابلہ کیا تھا جس میں انہیں شکست ہوئی تھی۔ عام آدمی پارٹی لیڈر میانک گاندھی نے آج رات کہا کہ انجلی دامنیا ، عام آدمی پارٹی ریاستی کنوینر اور کارکنوں کے ساتھ اجلاس منعقد ہوا جس میں بعض اہم قراردادیں منظور کی گئیں۔ اس کے بعد دونوں قائدین اپنے استعفے سے دستبردار ہوگئے۔ پریتی مینن جوپارٹی کی ریاستی سکریٹری ہیں، اجلاس میں موجود نہیں تھیں ، لیکن اجلاس کی روئیداد سے انہیں واقف کرایا گیا اور انہوں نے استعفیٰ سے دستبرداری سے اتفاق کرلیا۔

TOPPOPULARRECENT