Monday , December 18 2017
Home / شہر کی خبریں / جیل میوزیم میں قید تنہائی کا احساس کرنے کا موقع

جیل میوزیم میں قید تنہائی کا احساس کرنے کا موقع

صرف پانچ سو روپے فیس، سیل فون کا استعمال نہیں، فرش پر سونا ، دال خشکہ کھانا ہوگا
حیدرآباد 7 اگسٹ (سیاست نیوز) اب آپ چاہیں تو ایک رات جیل کی کوٹھڑی میں کاٹ سکتے ہیں۔ صرف پانچ سو روپئے ادا کرکے آپ قید تنہائی کا احساس کرسکتے ہیں۔ یاد رکھیں وہاں آپ سیل فون استعمال نہیں کرسکیں گے۔ آپ کو دال خشکہ کھانا پڑے گا اور فرش پر سونا ہوگا اوڑھنے کے لئے صرف ایک بلانکٹ دی جائے گی۔ تلنگانہ اسٹیٹ جیل ڈپارٹمنٹ نے قیدی کی زندگی کا احساس کرنے کے مقصد سے یہ انوکھا نظریہ پیش کیا ہے۔ سنگاریڈی میں ہیرٹیج جیل میوزیم میں حکام جلد ہی جیل کے کمروں کے لئے بکنگ شروع کریں گے۔ اس اسکیم کو ’’جیل کا احساس کیجئے‘‘ نام دیا گیا ہے۔ 1796 ء میں نظام کے دور حکومت میں تعمیر شدہ جیل میں 24 گھنٹے قیام کا خرچ پانچ سو روپئے سے کم نہیں ہوگا۔ حال میں کی گئی تعمیر و مرمت کے ساتھ اس جیل میوزیم میں مردوں کے لئے 8 کوٹھڑیاں اور خواتین کے لئے ایک کمرہ، کچن، ڈسپنسری، میس ہال، قدیم سپرنٹنڈنٹ اور 3 واچ ٹاورس موجود ہیں۔ پانچ ایکڑ رقبہ پر محیط جیل میوزیم میں ایک سو دس افراد کے قیام کا انتظام ہے۔ یہ جیل مئی 2012 ء میں منتقل کی جاچکی ہے۔ ڈائرکٹر جنرل محابس وی کے سنگھ نے کہاکہ جیل میوزیم میں روزانہ تیس وزیٹرس کو آنے دیا جائے گا۔ جیل میوزیم میں آنے والوں کو 5 بجے شام کے بعد کوٹھڑی میں رات بھر تنہا رہنا پڑے گا۔ وہ سیل فون بھی استعمال نہیں کرسکیں گے۔ اس پراجکٹ کا مقصد شہریوں کو قید تنہائی کا احساس دلانا ہے۔

TOPPOPULARRECENT