Tuesday , November 21 2017
Home / ہندوستان / جیویلرس کی ملک گیر ہڑتال میں توسیع اکسائز ڈیوٹی سے فی الفور دستبرداری کا مطالبہ

جیویلرس کی ملک گیر ہڑتال میں توسیع اکسائز ڈیوٹی سے فی الفور دستبرداری کا مطالبہ

نئی دہلی ۔ 8 ۔ مارچ : ( سیاست ڈاٹ کام) : طلائی زیورات کی خریداری پر ایک فیصد اکسائز ڈیوٹی نافذ کرنے سے متعلق بجٹ تجویز کے خلاف جیویلرس کو ملک گیر ہڑتال آج ساتویں دن میں داخل ہوگئی ۔ گوکہ مرکزی حکومت نے اس مسئلہ پر غور و خوص کا تیقن دیا ہے ۔ آل انڈیا صرافہ اسوسی ایشن کے نائب صدر سریندر کمار جین نے بتایا کہ اکسائز ڈیوٹی کی تجویز سے حکومت کی دستبرداری تک غیر معینہ مدت کے لیے ہڑتال جاری رہے گی ۔ وزیر فینانس ارون جیٹلی نے 29 فروری کو پیش کردہ بجٹ میں جیویلری پر ایک فیصد اکسائز ڈیوٹی وصول کرنے کی تجویز کا اعلان کیا تھا ۔ جس کے خلاف گذشتہ ایک ہفتہ سے زیورات کی دکانات کو بند رکھا گیا ہے ۔ ملک کے مختلف مقامات پر احتجاج کرنے والی تنظیموں نے اجتماعی فیصلہ کیا ہے کہ چھوٹے بڑے ٹاونس میں بھی صرافہ مارکٹ کو بند کرتے ہوئے دھرنا منظم کیا جائے ۔ علاوہ ازیں جیویلرس کو 2 لاکھ روپئے اس سے زائد مالیتی زیورات کی خریدی پر پیان کارڈ کے حوالہ کو لازمی قرار دینے پر اعتراض ہے ۔ تاجروں نے متنبہ کیا کہ اکسائز ڈیوٹی کے نفاذ سے چھوٹے جیویلرس کو کاغذ کا کام ( پیپر ورک ) بڑھ جائے گا ۔ ایک اندازہ کے مطابق گذشتہ ایک ہفتہ کی ہڑتال سے صرافہ مارکٹ کو 10,000 کروڑ کے نقصانات سے دوچار ہونا پڑا ۔۔

TOPPOPULARRECENT