Wednesday , December 13 2017
Home / ہندوستان / جیٹلی کا عاپ لیڈرس کیخلاف ہتک عزت مقدمہ

جیٹلی کا عاپ لیڈرس کیخلاف ہتک عزت مقدمہ

دیپک باجپائی کی درخواست ہائیکورٹ میں مسترد
نئی دہلی۔ 8 فروری (سیاست ڈاٹ کام) دہلی ہائیکورٹ نے عام آدمی پارٹی ترجمان دیپک باجپائی کی درخواست آج مسترد کردی جس میں انہوں نے مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی کی جانب سے اُن کے خلاف دائر کردہ ہتک عزت مقدمہ کے استرداد کی خواہش کی تھی۔ جسٹس ویپن سنگھی کی بینچ نے عآپ لیڈر کی درخواست کو مسترد کردیا جنہوں نے یہ استدلال پیش کیا تھا کہ ارون جیٹلی نے اس مقدمہ میں اُن کے خلاف مخصوص نوعیت کے کوئی الزامات نہیں لگائے چنانچہ بحیثیت مدعی علیہ اُن کا نام حذف کردیا جانا چاہئے۔ یہ مقدمہ چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال اور عآپ کے پانچ دیگر قائدین بشمول باجپائی کے خلاف ارون جیٹلی نے دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) اُمور میں بے قاعدگیوں کے الزامات کے پس منظر میں دائر کیا ہے۔ ارون جیٹلی 1993ء اور 2013ء کے درمیان ڈی ڈی سی اے کے صدر تھے۔ آج بحث کے دوران سینئر ایڈوکیٹ ایچ ایس پھولکا نے باجپائی کی جانب سے پیش ہوتے ہوئے کہا کہ اُن کے موکل کے خلاف مخصوص کوئی الزام عائد نہیں کیا گیا ہے، لہذا ان کا نام اس فہرست سے حذف کردیا جانا چاہئے،کیونکہ جیٹلی کے حلف نامہ میں بھی ایسا کوئی مخصوص تذکرہ نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT