Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / جیٹلی کے تیقنات سے چندرابابونائیڈو غیر مطمئن

جیٹلی کے تیقنات سے چندرابابونائیڈو غیر مطمئن

’’کیا میں کبھی کسی بات سے مطمئن ہوا ہوں، کبھی نہیں، یہ میری خصوصیت ہے‘‘
وجئے واڑہ 2 اگسٹ (پی ٹی آئی) مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی آج آندھراپردیش کے چیف منسٹر این چندرابابو نائیڈو سے بات کی اور اُنھیں تیقن دیا کہ خصوصی موقف کے مسئلہ کے بشمول دیگر تمام مسائل بہت جلد حل کرلئے جائیں گے لیکن نائیڈو نے کہاکہ وہ مرکز کے اِس تیقن سے مطمئن نہیں ہیں۔ وزیر فینانس کے تیقن پر اپنے اطمینان سے متعلق ایک سوال پر چیف منسٹر چندرابابو نائیڈو نے ریمارک کیاکہ ’’نہیں! کبھی نہیں۔ کیا میں کبھی کسی بات سے مطمئن ہوا ہوں، یہ میری خصوصیت ہے‘‘۔ چندرابابو نائیڈو نے آج رات دیر گئے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ اس دوران انھوں نے اپنی ریاست کی تقسیم کی ایک مرتبہ ساری تاریخ بیان کردی اور کہاکہ تقسیم کے بعد باقی رہ جانے والی اِس ریاست کو کئی مسائل تقسیم کے ورثے میں ملے ہیں۔ نائیڈو نے کہاکہ ’’جیٹلی نے آج صبح مجھ سے بات چیت کی اور کہاکہ مرکز تمام مسائل حل کرنا چاہتا ہے جس میں خصوصی موقف کا مسئلہ بھی شامل ہے۔ بعدازاں انھوں نے اِس مسئلہ پر پارلیمنٹ میں بھی اعلان کیا۔ اب اُنھیں اپنے الفاظ کا پاس و لحاظ کرنا ہوگا‘‘۔ چندرابابو نائیڈو گزشتہ تین دن سے ارون جیٹلی کو اپنی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے یہ کہہ رہے تھے کہ آندھراپردیش کو دی جانے والی مرکزی امداد کے بارے میں راجیہ سبھا میں کئے گئے اُن کے دعوے ناقابل قبول ہیں۔ چندرابابو نائیڈو نے کہاکہ ’’بی جے پی اور ٹی ڈی پی دو ساجھیدار ہیں چنانچہ آندھراپردیش سے انصاف کرنا ہماری ذمہ داری ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT