Thursday , July 19 2018
Home / شہر کی خبریں / جی ایس ٹی تلنگانہ کی ترقی میں حائل : ایٹالہ

جی ایس ٹی تلنگانہ کی ترقی میں حائل : ایٹالہ

مرکز کے فیصلے ، ریاستی حکومتوں کے مالیہ پر کاری ضرب ، وزیر فینانس
حیدرآباد ۔ 20 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ کے وزیر فینانس ایٹالہ راجندر نے آج کہا کہ مرکز کی پالیسیوں سے ریاستی حکومتوں کے مالیہ پر کاری ضرب پڑ رہی ہے ۔ نئے گڈس اینڈ سرویس ٹیکس کی وجہ سے ریاست تلنگانہ میں پیداوار کی شرح گھٹ گئی ہے ۔ جی ایس ٹی تلنگانہ کی ترقی میں حائل ہورہا ہے ۔ انہوں نے مختلف مسائل پر مرکزی حکومت کے یکطرفہ فیصلوں پر ناراضگی ظاہر کی اور کہا کہ ریاست سے اکھٹا کیا جانے والا 48 فیصد ٹیکس جی ایس ٹی میں ضم کردیا گیا ہے ۔ جس سے ریاستی خزانہ پر مالیاتی بوجھ بڑھ گیا ہے ۔ آل انڈیا اسوسی ایشن آف سنٹرل اکسائز گزیٹیڈ ایگزیکٹیو آفیسرس کے جنرل باڈی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ٹیکس اکھٹا ہونے کی شرح میں کمی سے مالیاتی خسارہ ہورہا ہے ۔ ریاست میں جی ایس ٹی پر عمل آوری کے ساتھ ہی ریاست کو ملنے والا ٹیکس کم ہوگیا ۔ مرکزی حکومت سے ریاست کو ملنے والا معاوضہ بھی وصول نہیں ہورہا ہے ۔ معاوضہ کے تحت مرکز کو 450 کروڑ روپئے جاری کرنا ہے لیکن حکومت نے مختلف وجوہات بتاکر ریاست کے حصہ کو کاٹ کر صرف 250 کروڑ روپئے جاری کئے ہیں ۔ ایٹالہ راجندر نے مزید کہا کہ مرکز کے اصلاحات اقدام اور اس پر عمل آوری سے معیشت پر منفی اثر پڑ رہا ہے ۔ نوٹ بندی اور جی ایس ٹی اصلاحات کی وجہ سے بعض ریاستیں اپنے ملازمین کو وقت پر تنخواہ ادا کرنے سے بھی قاصر ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT