Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / جی ایس ٹی کالاسانپ، نوٹ بندی پُھس پُھس انار

جی ایس ٹی کالاسانپ، نوٹ بندی پُھس پُھس انار

یوپی میں دیوالی کے موقع پر انوکھے ناموں کے پٹاخے
الہ آباد ۔ 18 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی حکومت کے نوٹ بندی اور جی ایس ٹی جیسے فیصلوں کا دیوالی پر بھی اثر پڑا ہے اور عوام نے اپنی برہمی کا اظہار کرتے ہوئے پٹاخوں کو انوکھے ناموں سے موسوم کیا ہے۔ اترپردیش میں کئی مقامات پر بازاروں میں ’’جی ایس ٹی کالا سانپ، نوٹ بندی پھُس پُھس انار‘‘ جیسے نام کے پٹاخے فروخت کئے جارہے ہیں۔ الہ آباد میں ایک شخص نے بتایا کہ اس نے دکان سے نوٹ بندی انار خریدے۔ ایک تاجر نے کہا کہ جی ایس ٹی اور نوٹ بندی سے موسوم پٹاخوں کی مارکٹ میں بھرمار ہے۔ مختلف سیاسی قائدین جیسے نریندر مودی، اکھیلیش یادو، یوگی آدتیہ ناتھ اور راہول گاندھی سے موسوم پٹاخے بھی فروخت کئے جارہے ہیں۔ زور دار آواز کرنے والے پٹاخے کو ’’یوگی چتاونی چٹائی‘‘، اسی طرح ’’اکھیلیش بم‘‘ پر ’’دکھ رہا ہے دم‘‘ تحریر کیا گیا ہے۔ راہول گاندھی کی بڑی تصویر کے ساتھ ’’چمکتا ستارہ انار‘‘ مارکٹ میں دستیاب ہے۔ ان پٹاخوں کی قیمت بھی کافی زیادہ ہے۔ ایک شخص نے کہا کہ جی ایس ٹی کالاسانپ پٹاخوں کی قیمت 15000 روپئے جبکہ نوٹ بندی پھس پھس انار کا باکس جس میں 6 پٹاخے ہوتے ہیں 5000 روپئے میں فروخت کیا جارہا ہے۔ تاجرین کا کہنا ہیکہ اس بار پٹاخوں کی فروخت میں نمایاں کمی آئی ہے اور ان کا کاروبار متاثر ہوا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT