Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایس ٹی کی آڑ میں کالا بازاری

جی ایس ٹی کی آڑ میں کالا بازاری

بغیر ٹیکس والی اشیاء پر زائد رقم کی وصولی ، صارفین پریشان
حیدرآباد ۔ 12 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : ایک ملک ایک ٹیکس کے لیے بنائی گئی جی ایس ٹی ( گڈس اینڈ سرویس ٹیکس ) کے نام پر غیر قانونی دھندہ شروع ہوچکا ہے کئی ایک اشیاء پر ٹیکس کم ہونے کے باوجود تاجرین زائد رقم وصول کررہے ہیں ۔ درحقیقت جی ایس ٹی کی تفصیلات صحیح طور پر نامعلوم ہونے کے باوجود ملکی سطح پر جی ایس ٹی کا بڑے زور و شور سے چرچا کیا جارہا ہے ۔ تاجرین جی ایس ٹی کی آڑ میں غریب و درمیانی آمدنی والے صارفین سے زائد رقم وصول کررہے ہیں ۔ صارفین سے دودھ ، دہی پر بھی 2 تا 4 روپئے زائد وصول کررہے ہیں ۔ جبکہ ان اشیاء پر جی ایس ٹی لاگو ہی نہیں ہوتا حالانکہ ان اشیاء کی قیمتوں میں کمی کا امکان ہے ۔ گزشتہ 15 دن سے شہر ہی نہیں بلکہ ملکی سطح پر جی ایس ٹی کی آڑ میں صارفین کو لوٹا جارہا ہے اور اب تک انتظامیہ نے اس جانب توجہ مبذول ہی نہیں کی ہے جس کی وجہ سے ملکی سطح پر عوام سے کروڑوں کا روپیہ غیر قانونی طور پر لوٹا جارہا ہے ۔ پریشان حال صارفین کا مطالبہ ہے کہ انتظامیہ فوری اس جانب توجہ دے کر انہیں راحت پہنچائیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT