Tuesday , December 11 2018

جی ایس ٹی کی وجہ سے پتنگ کا کاروبار ٹھپ

حیدرآباد 7 جنوری (سیاست نیوز) گزشتہ سنکرانتی کے دوران نوٹ بندی کی وجہ سے پتنگوں اور مانجہ کے کاروبار پر انتہائی بُرا اثر پڑا تھا تو اس سنکرانتی کے موقع پر جی ایس ٹی کی وجہ سے کاروبار پر ضرب لگی ہے۔ بیوپاری اس بات پر حیران پریشان ہیں کہ حکومت نے پتنگوں پر 12 فیصد جی ایس ٹی لگایا ہے اور پتنگوں کو کھلونے میں شمار کیا گیا ہے۔ پتنگوں پر جی ایس ٹی لاگو کرنے سے کاروبار ٹھپ ہے۔ بتایا گیا کہ پتنگوں کے کاروبار پر شروع میں 12 فیصد ٹیکس لگایا گیا تھا جو اب کم کرتے ہوئے پانچ فیصد کیا گیا ہے۔ حیدرآباد پتنگ مانجے کا بہت بڑا ہول سیل مارکٹ ہے۔ آس پاس کے علاقوں کے افراد یہاں سے بڑے پیمانے پر خریدی کرتے ہیں۔ لیکن جی ایس ٹی کی وجہ سے کاروبار بُری طرح ٹھپ ہوا ہے۔ پتنگوں کی چلر فروخت زیادہ متاثر نہیں ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT