Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایچ ایم سی انتخابات ، اقلیتوںسے حصول تائید کیلئے تلگودیشم کی مہم

جی ایچ ایم سی انتخابات ، اقلیتوںسے حصول تائید کیلئے تلگودیشم کی مہم

عوامی رابطہ کا پروگرام، فیروز خاں کو اقلیتوں کی ذمہ داری، مشاورتی ا جلاس میں گوپی ناتھ کی شرکت
حیدرآباد۔/7نومبر، ( سیاست نیوز) گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے مجوزہ انتخابات میں اقلیتی طبقہ کی تائید حاصل کرنے کیلئے تلگودیشم پارٹی نے باقاعدہ مہم چلانے کا فیصلہ کیا ہے  جس کے تحت اقلیتوں کی قابل لحاظ آبادی والے علاقوں میں عوامی رابطہ کا پروگرام منعقد کیا جائے گا جس میں عوامی مسائل کی سماعت کے علاوہ انتخابات میں تلگودیشم کی تائید کی اپیل کی جائے گی۔ گریٹر حیدرآباد تلگودیشم کے قائد محمد فیروز خاں کو اقلیتوں میں پروگراموں کے انعقاد کی ذمہ داری دی گئی ہے اور وہ گریٹر حدود کے دیگر اقلیتی قائدین سے مشاورت کے بعد حکمت عملی طئے کریں گے۔ گریٹر حدود میں تلگودیشم پارٹی کا کیڈر کافی مضبوط ہے اور پارٹی کو یقین ہے کہ انتخابات میں بی جے پی سے اتحاد کے باعث پارٹی شاندار مظاہرہ کے موقف میں رہے گی۔ فیروز خاں نے حلقہ اسمبلی نامپلی کے پارٹی عہدیداروں کے ساتھ اجلاس منعقد کیا جس میں رکن اسمبلی گوپی ناتھ اور دوسروں نے شرکت کی۔ اس اجلاس میں قائدین اور کارکنوں کو ہدایت دی گئی کہ وہ گریٹر انتخابات کیلئے ابھی سے متحرک ہوجائیں۔ قائدین نے کہا کہ تلگودیشم پارٹی کے دور حکومت میں حیدرآباد کی ترقی اور عوام کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے سلسلہ میں جو اقدامات کئے گئے اس کی مثال کوئی اور حکومت پیش نہیں کرسکتی۔ چندرا بابو نائیڈو نے شہر حیدرآباد کی ترقی میں جو رول ادا کیا عوام اس کے قائل ہیں۔ فیروز خاں نے کہا کہ تلگودیشم پارٹی کو اقلیتوں کی بھرپور تائید حاصل ہے اور گریٹر انتخابات میں تمام اسمبلی حلقوں میں پارٹی کا شاندار مظاہرہ رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ اسمبلی نامپلی تلگودیشم پارٹی کا مضبوط گڑھ ہے اور انہیں یقین ہے کہ اس اسمبلی حلقہ کے تحت آنے والے تمام بلدی وارڈس پر تلگودیشم کا قبضہ رہے گا۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ گزشتہ بلدیہ میں منتحب مقامی جماعت کے نمائندوں نے عوامی مسائل کی یکسوئی میں کوئی دلچسپی نہیں لی۔ انہوں نے کہا کہ اسمبلی کے ارکان بھی مسائل کی یکسوئی میں ناکام ہوچکے ہیں۔ حلقہ اسمبلی نامپلی کے کئی علاقوں میں آج بھی عوام صاف پینے کے پانی کی سربراہی، برقی اور ڈرینج نظام جیسی بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں۔ نئے شہر کے علاقہ میں موجود یہ اسمبلی حلقہ اپنی پسماندگی کے سبب سلم علاقوںکا مرکز بن چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلگودیشم پارٹی نے ہمیشہ عوامی مسائل کی یکسوئی کیلئے حکومت سے جدوجہد کی ہے۔ کئی اسمبلی حلقوں میں پارٹی کے قائدین مقامی عوامی نمائندوں سے زیادہ خدمات انجام دے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT