Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / جی ایچ ایم سی ورکرس کی تنخواہوں میں اضافہ

جی ایچ ایم سی ورکرس کی تنخواہوں میں اضافہ

دسہرہ کا تحفہ ، حکومت سے احکامات کی اجرائی
حیدرآباد ۔ 20 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : حکومت تلنگانہ نے دسہرہ تہوار تحفہ کے طور پر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن ( جی ایچ ایم سی ) میں خدمات انجام دینے والے مختلف زمروں کے ورکروں کی تنخواہوں میں اضافہ کرنے کا فیصلہ کیا اور بتایا جاتا ہے کہ ورکروں کو اضافہ شدہ تنخواہوں کی رقم ماہ اگست کی تنخواہ سے ہی دئیے جانے کی توقع پائی جاتی ہے ۔ درحقیقت جی ایچ ایم سی ورکرس کی تنخواہوں میں اضافہ کرنے کا فیصلہ خود چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے 23 مئی کو ہی کردیا تھا ۔ لیکن کسی ناگزیر وجوہات کے باعث قابل عمل نہیں ہوسکے ۔ لیکن ’ دیر آئید درست آئید ‘ کے مصداق دسہرہ تہوار کے موقعہ پر اضافہ شدہ تنخواہ کی رقم ادا کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے ۔ تفصیلات کے مطابق بتایا جاتا ہے کہ جی ایچ ایم سی صفائی ورکرس وٹرنری ، ٹرانسپورٹ ورکرس ، اینٹامالوجی فیلڈ ورکرس ، سپروائزری فیلڈ ورکرس کی تنخواہوں کو 8500 روپیوں سے بڑھاکر 12500 روپئے ، سینٹری فیلڈ اسسٹنٹس اینٹامالوجی فیلڈ اسسٹنٹس کی تنخواہوں کو 7,779 سے بڑھاکر 13,000 روپئے ، ٹرانسپورٹ ڈرائیورس کی تنخواہوں کو 10,160 سے بڑھاکر 15 ہزار روپئے کرنے کا ماہ اگست 2015 میں چیف منسٹر نے اعلان کیا تھا ۔ اور دوبارہ ماہ مئی 2017 میں چندر شیکھر راؤ کی جانب سے کئے گئے اعلان کی روشنی میں جی ایچ ایم سی ورکرس کی تنخواہوں کو 12,500 روپیوں سے بڑھاکر 14 ہزار روپئے ، ایس ایف اے ۔ ای ایف اے ورکرس کو 12 ہزار سے بڑھاکر 14,500 روپئے کرتے ہوئے تازہ جی او جاری کیا گیا اور جاری کردہ جی او میں صاف طور پر اس بات کی وضاحت کردی گئی کہ جی ایچ ایم سی ورکرس کی اضافہ شدہ تنخواہوں کی رقم کو جی ایچ ایم سی فنڈز ( رقومات ) سے ہی ادا کی جانی چاہئے ۔ بتایا جاتا ہے کہ حکومت نے جی ایچ ایم سی ورکرس کی حاضری بائیو میٹرک سسٹم کے ساتھ ساتھ مینیول سے بھی لی جانی چاہئے ۔ علاوہ ازیں جاری کردہ جی او میں واضح کیا گیا کہ سوچھ حیدرآباد کے جذبہ سے ورکروں کو اپنی خدمات انجام دینے کی سخت تاکید کی گئی ہے اور جی ایچ ایم سی کی ہر گاڑی کو جی پی ایس سسٹم سے مربوط کرنے کے اقدامات کی ہدایت دی گئی ۔ بتایا جاتا ہے کہ جی ایچ ایم سی صفائی ورکروں کو دی جانے والی تنخواہ کی رقم 14 ہزار روپئے ماہانہ ملک بھر کے کسی اور میونسپل کارپوریشنوں میں ہرگز فراہم نہیں کی جاسکتی ہے ۔ اسی دوران کمشنر بلدیہ ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے مزید بتایا کہ صفائی ورکرس وغیرہ کے ساتھ حکومت کی پائی جانے والی بھر پور ہمدردی کی مذکورہ جاری کردہ جی او ایک زبردست مثال و ثبوت ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ تنخواہوں میں اضافہ کا اثر جملہ 22,394 افراد کے لیے فائدہ بخش ثابت ہوگا ۔ جن میں 18,382 صفائی ورکرس 1537 افراد شعبہ ٹرانسپورٹ کے ورکرس ، 2250 انیٹامالوجی ورکرس 948 ایس ایف اے ورکرس اور 225 وٹرنری ورکرس شامل ہیں ۔ جی ایچ ایم سی ورکرس کی تنخواہوں میں اضافہ پر مئیر جی ایچ ایم سی مسٹر بی رام موہن ، ڈپٹی مئیر جی ایچ ایم سی مسٹر بابا فصیح الدین نے مسرت کا اظہار کیا اور کہا کہ محض چیف منسٹر نے اپنی خصوصی دلچسپی کے ذریعہ 8500 روپئے ورکر کی تنخواہ کو بڑھا کر 14 ہزار روپئے کرنے پر چیف منسٹر سے اظہار تشکر کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT