جی ای ایس میٹ کے بعد شہر کی سڑکیں خستہ حالی کا شکار

خوبصورت پودے غائب، گداگروں کی دوبارہ آمد

حیدرآباد۔10ڈسمبر(سیاست نیوز) شہر میں منعقد ہوئے جی ای ایس سمٹ کے بعد شہر کی سڑکوں کی حالت جوں کی توں ہونے لگی ہے اور شہر میں لگائے گئے خوبصورت پودے غائب ہونے کے ساتھ ساتھ سڑکوں پر گداگر دوبارہ نظر آنے لگے ہیں ۔ جی ای ایس سمٹ سے قبل مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے شہر کو گداگروں سے پاک بنانے کی مہم کے متعلق یہ کہا گیا تھا کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی دختر ایوانکا ٹرمپ کے دورۂ حیدرآباد سے گداگروں سے پاک شہر بنانے کی مہم کا کوئی تعلق نہیں ہے بلکہ جی ایچ ایم سی کی جانب سے شہر کو گداگروں سے پاک بنانے کے سلسلہ میں غیر سرکاری تنظیم کی اعانت سے طویل مدتی منصوبہ تیار کیا گیا ہے لیکن اس منصوبہ پر عمل آوری نظر نہیں آرہی ہے ۔ 28تا30 نومبر 2017 شہر میں منعقد ہوئے جی ای ایس سمٹ کے لئے شہر میں بڑے پیمانے پر تیاریاں کی جاتی رہی تھی اور شہر کی سڑکوں کو بہتر بنانے کے علاوہ خوبصورتی میں اضافہ کیلئے پودے لگائے گئے تھے لیکن چند یوم قبل شہر ہائی ٹیک سٹی اور مادھا پور کے علاقوں سے خوبصورت پودوں کے غائب ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی تھیں اور اب تیزی سے شہر کی سڑکوں اور سگنلس پر بھکاری بھی واپس ہونا شروع ہو چکے ہیں لیکن بلدی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ جو گداگر نظر ٓٓآرہے ہیں وہ نئے ہیں انہیں شیلٹر ہوم منتقل ہی نہیں کیا گیا تھا اور بہت جلد دوبارہ اس مہم میں شدت پیدا کی جائے گی۔ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے علاوہ جی ایچ ایم سی حدود کو گداگروں سے پاک بنانے کیلئے شروع کردہ مہم کے سلسلہ میں عہدیداروں کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے فنڈس کی اجرائی کے ساتھ ہی اس منصوبہ کو عملی جامہ پہنانے کے لئے مہم شروع کردی جائے گی۔ایوانکا ٹرمپ کی آمد سے قبل چلائی گئی مہم کے دوران یہ کہا جا رہاتھا کہ اس مہم کا تعلق جی ای ایس سے نہیں ہے اور ڈسمبر میں یہ مہم از سرنو چلائی جائے گی لیکن ڈسمبر کے 10یوم گذر جانے کے باوجود اس مہم میں کوئی پیشرفت نظر نہیں آرہی ہے اور نہ ہی اس سلسلہ میں کوئی احکامات یا تیاریاں دیکھی جا رہی ہیں۔ بتایاجاتاہے کہ جی ایچ ایم سی اور محکمہ پولیس کی جانب سے حکومت کے بجٹ کا انتظار کیا جارہا ہے تاکہ نئے گداگر جو شہر کی سڑکوں پر بھیک مانگنے کیلئے اتر آئے ہیں انہیں شیلٹر ہوم منتقل کرنے کے اقدامات کئے جا سکیں۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد اور گداگروں کی باز آبادکاری کے سلسلہ میں کام کرنے والی تنظیم کے ذمہ داروں نے اعلان کیا تھا کہ شہر کی سڑکوں پر 5ڈسمبر کے بعد گداگر کی نشاندہی کرنے والوں کو 500 روپئے دیئے جائیں گے لیکن شہر کے کئی فٹ پاتھس اور دیگر مقامات پر اب بھی گداگروں کی بہتات نظر آرہی ہے لیکن جی ایچ ایم سی کی جانب سے کوئی کاروائی کے آثار نظر نہیں آرہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT