Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / جی ای سی میں شرکت کے علاوہ کچھ تفریح بھی کرنا چاہتی ہوں : ایوانکا

جی ای سی میں شرکت کے علاوہ کچھ تفریح بھی کرنا چاہتی ہوں : ایوانکا

تاریخی چارمینار کی سیر پروگرام میں شامل
مختلف نظریات کے تبادلہ کیلئے ایک کھلے اور
مشترکہ ماحول کی پیش قیاسی
وزیراعظم نریندر مودی اور وزیرخارجہ سشماسوراج
سے ایک بار پھر ملاقات کرنے کا اشتیاق
اخباری نمائندوں سے بات چیت

واشنگٹن ۔ 23 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی دختر اور مشیر نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ معاشی ترقی اور مواقع فراہم کئے جانے کیلئے ہندوستان اور امریکہ مستقبل میں بھی ایک ساتھ کام کرتے رہیں گے۔ ایوانکا نے یہ بات اپنے دورۂ ہندوستان پر روانہ ہونے سے کچھ روز قبل کہی جیسا کہ موصوفہ ہندوستان کے نوابی شہر حیدرآباد میں 28 تا 30 نومبر گلوبل انٹرپرینر شپ سمٹ میں شرکت کیلئے آنے والی ہیں۔ 36 سالہ ایوانکا اس موقع پر ایک اعلیٰ سطحی و بااختیار امریکی وفد کی قیادت کریں گی جن میں عہدیداروں کے علاوہ مرد و خاتون تاجرین اور دیگر شرکت کررہے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق 170 ممالک سے تعلق رکھنے والے تقریباً 1500 انٹرپرینرس شرکت کریں گے اور سب سے اہم بات یہ ہیکہ صرف امریکہ سے ہی شرکت کرنے والوں کی تعداد 350 بتائی گئی ہے جن میں اکثریت ہندوستانی نژاد امریکی شہریوں کی ہے۔ سمٹ میں ایوانکا کلیدی خطاب کریں گی جس کا افتتاح وزیراعظم ہند نریندر مودی کے ہاتھوں عمل میں آئے گا۔ ایوانکا کا کہنا ہیکہ اس سمٹ کا مقصد مختلف نظریات کے تبادلہ کیلئے ایک کھلے اور مشترکہ ماحول کے ساتھ خدمات انجام دی جائیں جس کے تحت مختلف نیٹ ورکس میں توسیع اور انٹرپرینرس کو اس انداز میں بااختیار بنایا جائے کہ وہ اپنے نظریات اور کام کرنے کی لگن اور جنون کو آئندہ بہترین سطح تک لے جائیں۔ لہٰذا میں ہندوستان کے دورہ کیلئے بہت زیادہ جوش و خروش اور ولولہ کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک ایسا ماحول تیار کرنا چاہتی ہوں جو سب کیلئے سازگار ہو۔ اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ ایک بار پھر وزیراعظم نریندر مودی اور وزیرخارجہ سشماسوراج سے ملاقات کی متمنی ہیں۔ بات چیت کے دوران ایوانکا کے چہرہ سے بھی جوش و خروش جھلک رہا تھا جس سے یہ ظاہر ہوتا ہیکہ موصوفہ ہندوستان کے دورہ پر آنے کیلئے بے چین ہیں۔ اس سمٹ کو ہند ۔ امریکہ مشترکہ طور پر منعقد کررہے ہیں۔ ایوانکا نے مزید کہا کہ ان کیلئے سب سے زیادہ فخر کی بات یہ ہیکہ ایسا شاید دنیا میں پہلی بار ہورہا ہیکہ کسی بین الاقوامی نوعیت کے اجلاس میں خاتون شرکاء کی اکثریت ہوگی۔ موجودہ طور پر 127 مختلف ممالک سے 52.5 فیصد خاتون انٹرپرینرس شرکت کررہی ہیں جبکہ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کے ایک اعلامیہ کے مطابق زائد از 10 ممالک بشمول افغانستان، سعودی عرب اور اسرائیل سے بھی خواتین پر مشتمل وفد جی ای سی میں شرکت کررہا ہے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہیکہ بعض عہدیداروں نے یہ اطلاع بھی دی ہیکہ ایوانکا کچھ وقت تفریح میں بھی گزارنا چاہتی ہیں اور اس سلسلہ میں حیدرآباد کے تاریخی چارمینار کا دورہ بھی ان کے پروگرام میں شامل ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے جاریہ سال جون میں جب امریکہ کا دورہ کیا تھا تو وائیٹ ہاؤس میں ایوانکا ٹرمپ کو خصوصی طور پر ہندوستان کا دورہ کرنے کی دعوت دی تھی۔ ایوانکا ایک انتہائی باصلاحیت خاتون ہیں۔ وہ امریکن ٹی وی کی معروف شخصیت ہونے کے علاوہ ایک ڈیزائنر، مصنفہ اور خاتون تاجر بھی ہیں۔ علاوہ ازیں وہ خواتین اور لڑکیوں کی تعلیم اور انہیں بااختیار بنانے کی بھی زبردست وکالت کرتی ہیں۔ ٹرمپ خاندان کے بزنس ایمپائر ’’دی ٹرمپ آرگنائزیشن‘‘ کی بھی ایوانکا ٹرمپ ایگزیکیٹیو نائب صدر رہ چکی ہیں جبکہ ان کے والد کے ٹی وی شو ’’دی اپرنٹس‘‘ میں بورڈ روم جج کے فرائض بھی انجام دے چکی ہیں۔ دوسری طرف عبوری ڈپٹی اسسٹنٹ سکریٹری آف اسٹیٹ برائے جنوبی و وسطی ایشیائی امور ٹام واجدا کاکہنا ہیکہ جی ای ایس سے ہند ۔ امریکہ شراکت داری اور دونوں ممالک کے درمیان جدیدیت اور انٹرپرینر شپ کو بھی فروغ حاصل ہوگا جو ہند ۔ امریکہ ایک دوسرے سے شیئر کرتے ہیں۔ اس ایونٹ سے خصوصی طور پر خاتون انٹرپرینر شپ کو زبردست تقویت حاصل ہوگی جو انہیں ایک مستحکم پلیٹ فارم بھی فراہم کرے گا جس کے ذریعہ انہیں اپنے نظریات اور نئی شراکت داریوں کے ذریعہ فنڈس کے علاوہ اپنے ٹارگٹ کسٹمرس کو حاصل کرنے میں بھی مدد ملے گی۔

TOPPOPULARRECENT