Thursday , January 18 2018
Home / شہر کی خبریں / جے سی دیواکرریڈی کی تلگودیشم میں شمولیت

جے سی دیواکرریڈی کی تلگودیشم میں شمولیت

بھائی پربھاکر اور بیٹے پون کے ساتھ صدر تلگودیشم سے ملاقات

بھائی پربھاکر اور بیٹے پون کے ساتھ صدر تلگودیشم سے ملاقات

حیدرآباد ۔ 23 ؍ مارچ (سیاست نیوز) سینئر کانگریس قائدین و سابق مسٹر جے سی دیواکر ریڈی نے سخت الفاظ میں کہا ہے کہ ریاست آندھرا پردیش میں کانگریس پارٹی کا نہ صرف صفایا کیا جائے بلکہ کانگریس پارٹی کو زمین دوز کر دیا جانا چاہئے ۔ آج شام یہاں صدر تلگودیشم پارٹی مسٹر این چندرابابونائیڈو کی قیامگاہ پہونچ کر مسٹر جے سی دیواکر ریڈی نے اپنے فرزند جے سی پون کمار ریڈی اور اپنے برادر مسٹر جے سی پربھاکر ریڈی کے ہمراہ مسٹر این چندرابابونائیڈونے اپنے سینکڑوں حامیوں کی موجودگی میں ملاقات کر کے تلگودیشم پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے کا اعلان کیا ۔ مسٹر این چندرابابونائیڈو نے مسرس جے سی دیوارکر ریڈی فرزند جے سی پون کمار ریڈی اور برادر جے سی پربھاکر ریڈی کا تلگودیشم پارٹی میں خیرمقدم کیا اور ان تینوں قائدین کو زرد رنگ کا تلگودیشم پارٹی کا کنڈوا اڑھا کر انہیں پارٹی میں شامل کرنے کا اعلان کیا ۔ اور کہا کہ ان قائدین کی پارٹی میں شمولیت سے ضلع اننت پور و دیگر رائلسیما اضلاع میں تلگودیشم پارٹی کی طاقت میں اضافہ ہوگا۔ اس موقعہ پر مسٹرجے سی دیواکر ریڈی نے اپنا اظہار خیال کرتے ہوئے صدر کل ہند کانگریس مسز سونیاگاندھی کو اپنی شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور الزام عائد کیا کہ سونیاگاندھی نے ریاست کو تقسیم کر کے اس ریاست کو زبردست نقصان پہونچایا اور سونیاگاندھی کے ریاست کو تقسیم کرنے کیلئے کئے گئے فیصلہ کے خلاف متحدہ ریاست آندھراپردیش کیلئے کئی گئی جدوجہد کو بھی خاطر میں نہ لانے کا سونیاگاندھی پر الزام عائد کیا ۔

اور کہا کہ اب اس تعلق سے بات کرنا ہی غیر ضروری ہوگا ۔ مسز سونیاگاندھی کی شہرت میں اضافہ کرنے کا مترادف ہوگا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ فی الوقت ریاست میں پائے جانے والے موجودہ حالات میں ریاست آندھرا پردیش (سیما آندھرا) کی تیز رفتار ترقی کو یقینی بنانے کی صلاحیت صرف اور صرف صدر تلگودیشم پارٹی مسٹر این چندرابابونائیڈو میں ہی پائی جاتی ہے ۔ مسٹر جے سی دیواکر ریڈی نے اس موقعہ پر یاد دلایا کہ سابق تلگودیشم حکومت میں بحیثیت چیف منسٹر مسٹر این چندرابابونائیڈو کی جانب سے کئے گئے ترقیاتی اقدامات کی ریاستی قانون ساز اسمبلی میں زبردست ستائش کی تھی ۔ انہوں نے اس توقع کا اظہار کیا کہ آئندہ انتخابات میں مسٹر چندرابابونائیڈو کی زیر قیادت تلگودیشم پارٹی ہی اقتدار حاصل کرے گی اور دیگر تمام پارٹیوں کا سیما آندھرا سے صفایا ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT