Tuesday , December 11 2018

جے پربھاکر راؤ ایم ایل سی وائی ایس آر سی پی کو تلگودیشم میں شمولیت

چیف منسٹر اے پی و صدر تلگودیشم مسٹر این چندرا بابو نائیڈو سے ملاقات

چیف منسٹر اے پی و صدر تلگودیشم مسٹر این چندرا بابو نائیڈو سے ملاقات

حیدرآباد ۔ 20 ڈسمبر (سیاست نیوز) وائی ایس آر کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل مسٹر جے پربھاکر راؤ نے تلگودیشم پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی۔ راج شیکھر ریڈی کے کٹر حامیوں میں شمار ہونے والے مسٹر جے پربھاکر راؤ مالا مہاناڈو کے ریاستی صدر بھی ہیں، جنہوں نے کانگریس کے دورحکومت میں راج شیکھر ریڈی کا مکمل ساتھ دیا تھا۔ راج شیکھر ریڈی کے ہیلی کاپٹر حادثے کے بعد وہ جگن کے بہت قریب ہوگئے تھے۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے بانی ارکان میں ان کا شمار ہوتا تھا۔ راج شیکھر ریڈی کی ہلاکت کی جب سی بی آئی تحقیقات شروع ہوئی تو جے پربھاکر راؤ واحد قائد تھے جنہوں نے راج شیکھر ریڈی کی موت پر کانگریس کی صدر مسز سونیا گاندھی پر شکوک کا اظہار کرتے ہوئے تحریری نوٹ پیش کیا تھا۔ تاہم 2014ء کے عام انتخابات سے قبل مسٹر جے پربھاکر راؤ اور صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی مسٹر جگن موہن ریڈی کے درمیان اختلافات پیدا ہوگئے تھے اور وہ نہ صرف پارٹی کی سرگرمیوں سے دور تھے بلکہ جگن موہن ریڈی کو پارٹی صدارت اور سیاست کیلئے نااہل قرار دے رہے تھے۔ جب بھی موقع ملتا ان پر تنقید کرنے کا کوئی بھی موقع ضائع نہیں کرتے تھے۔ بلآخر انہوں نے آندھراپردیش سکریٹریٹ میں صدر تلگودیشم پارٹی و چیف منسٹر آندھراپردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو سے ملاقات کرتے ہوئے تلگودیشم پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی ہے اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ تقسیم ریاست کے بعد آندھراپردیش کو ترقی دینے کیلئے چندرا بابو نائیڈو کی شکل میں بہتر قائد عوام کو ملا ہے جو تجربہ کار ہے اور کارکردگی کے معاملے میں مثالی نمونہ ہے۔ سماج کے تمام طبقات اور آندھراپردیش کی ترقی کیلئے ان کے پاس ویژن ہے جس سے متاثر ہوکر وہ تلگودیشم میں شامل ہوئے ہیں اور پارٹی انہیں جو بھی ذمہ داری دے گی وہ اس کو بخوبی نبھاتے ہوئے بھروسے کو قائم رکھنے کی ہر ممکن کوشش کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT