Thursday , September 20 2018
Home / سیاسیات / جے ڈی ( یو ) امیدواراخترالایمان کانگریسی امیدوار کے حق میں دستبردار مولانا اسرار الحق کا مقابلہ اب بی جے پی کے جیسوال سے

جے ڈی ( یو ) امیدواراخترالایمان کانگریسی امیدوار کے حق میں دستبردار مولانا اسرار الحق کا مقابلہ اب بی جے پی کے جیسوال سے

کشن گنج( بہار )۔/15اپریل، ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر اعلیٰ بہار نتیش کمار کو عین انتخابات سے قبل ایک زبردست سیاسی جھٹکا اسوقت لگا جب کشن گنج سے جے ڈی ( یو) امیدوار نے پارلیمانی انتخابات کے لئے کانگریس امیدوار کے حق میں اپنی نامزدگی سے دستبرداری اختیار کرلی۔ دریں اثناء جے ڈی ( یو ) امیدوار اخترالایمان نے کہا کہ انہوں نے کانگریس کے موجودہ قائد

کشن گنج( بہار )۔/15اپریل، ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر اعلیٰ بہار نتیش کمار کو عین انتخابات سے قبل ایک زبردست سیاسی جھٹکا اسوقت لگا جب کشن گنج سے جے ڈی ( یو) امیدوار نے پارلیمانی انتخابات کے لئے کانگریس امیدوار کے حق میں اپنی نامزدگی سے دستبرداری اختیار کرلی۔ دریں اثناء جے ڈی ( یو ) امیدوار اخترالایمان نے کہا کہ انہوں نے کانگریس کے موجودہ قائد کے حق میں دستبردار ہونے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ اقلیتوں کے ووٹس کو تقسیم ہونے سے بچایا جاسکے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ کانگریس امیدوار مولانا اسرارالحق اقلیتوں کی اکثریت والے کشن گنج حلقہ سے دوبارہ منتخب ہونے کوشاں ہیں۔ اخترالایمان نے حال ہی میں آر جے ڈی سے جے ڈی ( یو ) میں شمولیت اختیار کی تھی اور کشن گنج ڈسٹرکٹ کے کوچھادمن حلقہ سے بحیثیت ایم ایل اے مستعفی ہوگئے تھے۔ وہ آر جے ڈی کے 13باغی ایم ایل ایز میں شامل تھے۔

بعد ازاں نتیش کمار نے انہیں کشن گنج سے انتخابات لڑنے ٹکٹ دیا تھا اور اب جبکہ اخترالایمان دستبردار ہوچکے ہیں اسی صورت میں اسرار الحق ( کانگریس ) اور بی جے پی کے ڈی کے جیسوال کے درمیان راست مقابلہ ہوگا جہاں 24اپریل کو رایء دہی منعقد شدنی ہے۔ اس موقع پر مزید وضاحت کرتے ہوئے اخترالایمان نے کہا کہ اپنے فیصلہ سے آگاہ کرنے انہوں نے وزیر اعلیٰ نتیش کمار سے رابطہ قائم کرنے کی کوشش کی تھی لیکن ان سے رابطہ قائم نہیں ہوسکا۔ اس کے بعد انہوں نے جے ڈی ( یو ) کے دیگر قائدین کو اپنے فیصلہ سے آگاہ کردیا۔ انہوں نے کہاکہ انتخابی میدان میں آنے کی وجہ فرقہ پرست طاقتوں کو شکست دینا ہے جن کی نمائندگی نریندر مودی کرتے ہیں۔ سیکولر طاقتوں کو مزید مستحکم کرنے انہوں نے انتخابی دوڑ سے دستبرداری اختیار کی۔ انہوں نے آخر میں یہ بھی کہا کہ وہ جے ڈی ( یو ) سے اپنا ناطہ نہیں توڑیں گے۔

مندر میں عوام سے خطاب، ہیما مالنی کے خلاف ایف آئی آر
متھرا۔ 15 ۔ اپریل (سیاست ڈاٹ کام) حلقہ لوک سبھا متھرا سے بی جے پی امیدوار ہیما مالنی کے خلاف بیرا گاؤں کی ایک مندر میں عوام سے خطاب پر انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے ضمن میں ایک ایف آئی آر درج کرلیا گیا ۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ دھریندر سچن نے کہا کہ ’’مٹھ تحصیل کے تحت بیرا گاؤں کے الکیشور مندر کی عمارت پر نہ صرف پارٹی (بی جے پی) کا پرچم اور بیانر لگایا گیا تھا بلکہ ہیما مالنی نے 17 اپریل کو مندر کے احاطہ کو استعمال کرتے ہوئے وہاں لاؤڈ اسپیکر پر عوام سے خطاب بھی کیا تھا‘‘۔ انہوں نے کہا کہ اس اداکارہ کے خلاف ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر پہلے ہی تین ایف آئی آر درج کئے جاچکے ہیں ۔ اس دوران اس حلقہ میں ضابطہ اخلاق کی مبینہ خلاف ورز یوں پر دیگر تین امیدواروں کے خلاف بھی نوٹس جاری کئے گئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT