Sunday , December 17 2017
Home / ہندوستان / حاجی علی ؒدرگاہ کے قریب مسجد انہدام سے محفوظ

حاجی علی ؒدرگاہ کے قریب مسجد انہدام سے محفوظ

نئی دہلی 14 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج ممبئی کی حاجی علیؒ درگاہ کے قریب غاصبانہ قبضوں کے بارے میں اپنے قبل ازیں جاری کردہ حکمنامہ میں ترمیم کردی اور درگاہ کے قریب واقع مسجد کنارا کو منہدم کئے جانے سے روک دیا۔ عدالت نے حکومت مہاراشٹرا سے یہ بھی کہاکہ اِس مسجد کو باقاعدہ بنانے سے متعلق عرضی پر اندرون ایک ہفتہ فیصلہ کیا جائے۔ چیف جسٹس جے ایس کھیہر اور جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ کی بنچ نے تمام فریقوں بشمول حاجی علیؒ ٹرسٹ کی منظوری باقاعدہ محفوظ کرلی کہ اگر ریاستی حکومت باقاعدگی سے متعلق درخواست مسترد کردیتی ہے تو کوئی بھی اِس مسجد کے بعض حصوں کو منہدم کرنے کی مخالفت نہیں کرے گا جو اِس تاریخی درگاہ کے قریب قبضے والی زمین پر تعمیر ہیں۔ بنچ نے ابتداء میں یہ بات رکھی تھی کہ فریقوں کو یہ مسجد کسی دیگر مقام پر منتقل کرنے پر اتفاق کرلینا چاہئے۔ یہ الزام ہے کہ مسجد کنارا کا کچھ حصہ قبضے کے علاقے کے تحت آتا ہے جسے بامبے ہائی کورٹ نے صاف کردینے کے احکام دیئے ہیں۔ سپریم کورٹ نے اسے برقرار رکھا ہے۔ بنچ اب اِس معاملے پر ایک ہفتے بعد سنوائی کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT