Monday , December 11 2017
Home / دنیا / حافظ سعید، حقانی نیٹ ورک پاکستان کیلئے بوجھ، خواجہ آصف کا اعتراف

حافظ سعید، حقانی نیٹ ورک پاکستان کیلئے بوجھ، خواجہ آصف کا اعتراف

30 سال قبل امریکہ کے چہیتے ہونے کا انکشاف،گھر پر نظربندی میں مزید ایک ماہ کی توسیع
نیویارک ۔ 27 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے وزیرخارجہ نے اعتراف کیا ہیکہ ممبئی دہشت گرد حملوں کے اصل سازشی سرغنہ حافظ سعید، وفاقی گروپ اور لشکرطیبہ ان کے ملک پاکستان کیلئے ایک بوجھ ہیں لیکن ان سے نجات حاصل کرنے کیلئے اسی (پاکستان) کے پاس ان سے نمٹنے کیلئے مطلوبہ اثاثے نہیں ہیں۔ وزیرخارجہ خواجہ آصف نے کہا کہ امریکہ، پاکستان پر دباؤ ڈال رہا ہے کہ وہ اپنی سرزمین پر سرگرم دہشت گرد گروپوں سے نمٹے جنہیں محض 20 تا 30 سال قبل وہ (امریکہ) بہت عزیز اور من پسند محبوب رکھتا تھا۔ پاکستان کے سرکاری خبر رساں ادارہ اسوسی ایٹیڈ پریس آف پاکستان نے خواجہ آصف کے حوالہ سے کہا کہ حقانیوں (حقانی دہشت گرد نیٹ ورک) کیلئے ہمیں موردالزام نہ ٹھہرائیں۔ حافظ سعید (جماعتہ الدعوہ دہشت گرد سربراہ) کیلئے ہمیں موردالزام نہ ٹھہرائیں۔ یہ وہی لوگ ہیں جو 20 تا 30 سال پہلے تک بھی آپ (امریکیوں) کیلئے کافی عزیز و محبوب تھے۔ انہیں وہائیٹ ہاؤز میں ’کھلایا‘ اور ’پلایا‘ جاتا تھا اور آپ کہہ رہے ہیں ’جہنم میں جاؤ پاکستانیو کیونکہ تم ان افراد کی پرورش و نگہداشت کررہے ہیں‘‘۔ خواجہ آصف نے کہا کہ یہ کہہ دینا بہت آسان ہے کہ پاکستان، حقانیوں اور حافظ سعید اور لشکرطیبہ کی سرپرستی و کفالت کررہا ہے (حالانکہ) یہ پاکستان کیلئے بوجھ ہیں۔ لاہور سے موصولہ اطلاع کے بموجب ممبئی دہشت گرد حملہ کے کلیدی سازشی حافظ سعید کی گھر پر نظربندی میں مزید ایک ماہ توسیع کردی گئی ہے۔ پاکستانی صوبہ پنجاب کے عہدیداروں نے کہا کہ ان کی سرگرمیاں ملک میں امن و سلامتی کیلئے خطرہ ہے۔ جماعتہ الدعوہ کے بانی حافظ سعید 31 جنوری 2017ء سے اپنی قیامگاہ پر نظربند ہیں۔

TOPPOPULARRECENT