Sunday , November 19 2017
Home / Top Stories / حالات کا مقابلہ کرنے مسلمان متحد ہوجائیں : زاہد علی خاں

حالات کا مقابلہ کرنے مسلمان متحد ہوجائیں : زاہد علی خاں

دستخطی مہم کے حوصلہ افزاء نتائج ، مسلم شادیوں کو اسلامی تعلیمات کا آئینہ دار بنانے کی تلقین ، دوبدو پروگرام سے خطاب

حیدرآباد ۔ 23؍ اکٹوبر ( دکن نیوز) جناب زاہد علی خان ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے کہاکہ مسلم شادیوں کو اسلامی تعلیمات کا آئینہ دار بنانا چاہئے ۔ شادیوں کو طئے کرنے میں لڑکا یا لڑکی کی ماؤں کا رول نہایت اہم ہوتا ہے ۔ عام طور پر لڑکے کی جانب سے مطالبات اور جہیز کی مانگ کے لئے ماؤں پر الزام عائد کیا جاتا ہے جو کسی حد تک صحیح ہے ۔ انہوں نے خواتین پر زور دیا کہ وہ اس مسئلہ  کو حل کرنے کے لئے لڑکی والوں کے احساسات کا بھی خیال رکھیں اور اپنی اولاد کی خوشگوار زندگی کے سامان فراہم کریں ۔ جناب زاہد علی خان نے آج ادارہ سیاست اور میناریٹیز ڈیولپمنٹ فورم کے زیر اہتمام رائیل ریجنسی گارڈنس آصف نگر میں منعقدہ 66 ویں دوبہ دو ملاقات پروگرام کو مخاطب کر رہے تھے جس میں 5000 سے زائد والدین  اور سرپرستوں نے شرکت کی ۔ جناب زاہد علی خان نے کہاکہ شادیوں سے پہلے کونسلنگ کا پروگرام ہونا چاہئے اس کے علاوہ شہر کے اکابرین  پر مشتمل ایک کمیٹی بنانی چاہئے جو قبل از وقت  شادی کونسلنگ میں شرکت کریں تاکہ غیر اسلامی  رسومات اور بے جا اسراف سے والدین کو بچایا جاسکے ۔ انہوں نے کہاکہ مسلم معاشرہ میں طلاق کے واقعات میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے جس کے ذمہ دار والدین ہیں ۔ اپنی اولاد اور اپنے معاشرہ کو اس صورتحال سے بچانے  کے لئے والدین کو موثر رول ادا کرنا ہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ مسلمانوں میں طلاق کے واقعات 5%  فیصد ہیں جب کہ ہندووں میں طلاق کی شرح 12% فیصد سے زائد ہے ۔

اس حقیقت کے باوجود بی جے پی حکومت مسلم پرسنل لا کو ہٹانے  کے لئے  پوری طرح سرگرم ہے ۔ انہوں نے مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ موجودہ  حالات میں ان کے خلاف روا رکھی جانے والی سازشوں کو سمجھیں اور حالات کا مقابلہ کرنے کے لئے متحد ہوجائیں ۔ جناب  زاہد علی خان نے کہا مسلکوں کے اختلافات سے نہ صرف ہمارا معاشرہ کمزور ہوگا بلکہ ہماری توانیاں بھی غیر مرکوز ہوجائیں گی ۔ انہوں نے کہاکہ یکساں سیول کوڈ کے خلاف جو دستخطی مہم جاری ہے اس کے نہایت ہی حوصلہ  افزاء نتائج برآمد ہو رہے ہیں ۔ چنانچہ سیاست کی  جانب سے بڑے پیمانے پر  فارمس کی اشاعت اور تقسیم کا کام شہر اور اضلاع میں جاری ہے ۔ انہوں نے کہاکہ شہر حیدرآباد کو ملک بھر میں اعزاز حاصل ہے کہ ہر تحریک کی شروعات اسی سرزمین سے ہوتی ہے اور حیدرآباد سے ابھرنے والی  تحریک کامیابی کی ضمانت  بن جاتی  ہے ۔ انہوں نے کہاکہ لڑکیوں کے انتخاب میں والدین  اور سرپرستوں کو فراخدلانہ رویہ اختیار کرنا ہوگا ۔ صورت کے مقابلہ میں سیرت کو ترجیح دینے کی ضرورت ہے ۔اسی طرح مطالبات کے فر سودہ روایات کو ترک کرنے سے ہمارے کئی مسائل حل ہوں گے ۔ انہوں نے مسلم شادیوں میں اسراف اور فضول  خرچی کو زوال کی علامت قرار دیا ۔ جناب فیصل بن علی القیعطی ‘ جناب عطار چاند پاشاہ رکن اسمبلی کدری اور ایم ایم نعیم نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کی ۔ مولانا عبدالملک مظاہری خطیب مسجد فردوس وجئے نگر کالونی نے کہا کہ رشتوں کو طئے کرنے کے سلسلہ میں اسلامی معیار کو اختیار کرنے کی ضرورت ہے  جس سے شادیوں میں اللہ تعالیٰ کی رحمتیں و برکتیں نازل ہوں گی ۔ جناب عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف نے ابتداء میں خیرمقدم کرتے ہوئے کہاکہ  جہیز اور جوڑے کی رقم کا مطالبہ اسلام میں حرام قرار دیا گیا ہے ۔ لڑکی والوں سے مطالبات کرنا بھیک مانگنے کے مترادف ہے ۔

انہوں نے کہاکہ ملک کے موجودہ حالات کے نتاظر میں مسلمانوں کو اپنے رویہ میں تبدیلی لانا ہوگا ۔ جناب عطار چاند پاشاہ رکن قانون ساز اسمبلی آندھراپردیش نے کہا کہ دوبہ دو ملاقات پروگرام  کے ذریعہ  سیاست اور ایم ڈی ایف نے مسلم سماج کے ایک اہم سلگتے ہوئے مسئلہ کو حل کرنے کے لئے ٹھوس اقدامات کر رہے ہیں ۔ یہ کام ایک عظیم  ثواب ہے کیونکہ آج سینکڑوں  خاندان  اپنے بچوں کے رشتے طئے نہ ہونے کے باعث پریشانی کے عالم  میں ہیں ۔ جلسہ کا آغاز قاری سید الیاس  باشاہ  کی قرأت کلام پاک سے  ہوا ۔ جناب احمد صدیقی مکیش بارگاہ سالت مآب میں ہدیہ نعت پیش کیا ۔ اج کے دوبہ دو پروگرام  میں لڑکوں  کے 140 اور لڑکیوں کے تقریباً 300 رجسٹریشن والدین اور سرپرستوں نے کروائے ۔ جناب انورالدین ‘ سید ناظم الدین ‘ محمد شاہد حسین ‘ لطیف النساء ‘  صباء کریم ‘  رئیس النساء ‘ فرزانہ ‘ محمد احمد ‘ اے اے کے امین ‘  صالح بن عبداللہ باحاذق ‘  سید الیاس باشاہ ‘  ایم اے  واحد ‘ تسکین ‘ خدیجہ سلطانہ ‘ محمد نصراللہ خان ‘ احمد صدیقی  مکیش ‘ کوثر جہاں ‘ ثانیہ ‘ زاہد فاروقی ‘ ڈاکٹر دردانہ ‘ سیدہ محمدی ‘ ڈاکٹر ناظم علی ‘ ڈاکٹر سیادت علی ‘ ریحانہ نواز اور دوسروں  نے کونسلنگ کے فرائض  انجام دیئے ۔ جناب ایم  اے قدیر آرگنائزنگ پریسڈنٹ نے انتظامات کی نگرانی کی ۔ دو بہ دو ملاقات میں آج جناب ظہیرالدین علی خان مینجنگ ایڈیٹر روزنامہ سیاست ‘ جناب علی الگتمی ‘ حبیب حیات ‘ محمد تاج الدین ‘ عثمان الہاجری ‘ کے بی جانی ‘ محمد سراج الدین قریشی ‘  امجد حسین ‘  محمد منور علی مختصر ‘ اور دوسروں نے شرکت کی ۔ جناب عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف نے رائل ریجنسی گارڈنس کے مالکین اور اسٹاف کے تعاون و اشتراک کا شکریہ ادا کیا ۔

TOPPOPULARRECENT