Saturday , November 17 2018
Home / جرائم و حادثات / حاملہ عورت کے قتل کا مفرور ملزم بہار میں گرفتار

حاملہ عورت کے قتل کا مفرور ملزم بہار میں گرفتار

حیدرآباد کو منتقلی،سائبر آباد پولیس نے سنسنی خیز قتل کا پُراسرار معمہ حل کرلیا
حیدرآباد ۔14فروری (سیاست ڈاٹ کام )تلنگانہ کی سائبرآباد پولیس نے حاملہ خاتون کا قتل کرکے نعش کے ٹکڑے کردینے کے معاملہ میں ملوث مفرورملزم کو ریاست بہارسے گرفتارکرکے شہر حیدرآباد منتقل کیا۔ پولیس نے بتایا کہ32 سالہ بنگی عرف پنکی کا تعلق موہنا مالتی گاوں، ضلع بانکا، ریاست بہارکے غریب خاندان سے تھا۔ اس کی شادی 13 سال پہلے دنیش نامی شخص سے ہوئی تھی جس سے اسے تین بچے ہیں۔ شادی کے اس کا اپنے شوہرسے جھگڑا ہوا اوروہ اپنے سات سال کے بیٹے جتن کو ساتھ لے کرگاوں چلی آئی۔ اس دوران اس کے ناجائز تعلقات وہیں کے رہنے والے 35 سالہ رمیش کشیپ سے قائم ہوگئے ۔ اسی گاوں میں 35 سالہ خاتون ممتا جھا اپنے 75 سالہ بوڑھے شوہرانل جھا کے ساتھ رہتی تھی۔ ان کا بیٹا 21 سالہ امرکانت جھا حیدرآباد میں ملازمت کرتا تھا۔ رمیش کے ناجائز تعلقات بوڑھے کی بیوی ممتا جھا سے بھی قائم ہوگئے ۔ ممتا کا شوہر اوربیٹا جانتے تھے کہ ممتا کے تعلقات رمیش سے ہیں۔بعد ازاں یہ خاندان پنکی سے پیچھا چھڑانے کیلئے اسے کچھ بتائے اورپتہ دئیے بغیرحیدرآباد منتقل ہوگیا۔ پنکی اپنے عاشق کو ڈھونڈتے ڈھونڈتے چند دن پہلے حیدرآباد پہنچی۔ جیسے ہی وہ شہرآئی ان تمام نے سوچا کہ وہ ان پربوجھ بن چکی ہے ۔ ان چاروں نے مل کرپنکی کو راستہ سے ہٹادینے کا منصوبہ بنایا۔ 28 فروری کوممتا، انل امرکانت اوررمیش نے ملکرخاتون کومارپیٹ کر گلا گھونٹ کر اس کا قتل کردیا۔ قتل کے بعد ایک دن لاش کو مکان میں ہی رکھا گیا۔ دوسرے دن ممتا اس کے بیٹے ، شوہراوررمیش نے تیزدھارالیکٹرک مشین سے پنکی کی نعش کے ٹکڑ ے ٹکڑے کرکے جسمانی اعضاء کو تھیلوں میں باندھ کرموٹرسائیکل کے ذریعہ پربوٹانیکل گارڈن کے پاس پھینک دیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT