Saturday , December 15 2018

حج سے قبل مدینہ کے نئے ایرپورٹ کا افتتاح اہم

پہلے مرحلہ کے بعد تیسرے مرحلہ کا بھی عنقریب افتتاح، چار ملین مربع میٹر رقبہ پر محیط ایرپورٹ کی تعمیر

پہلے مرحلہ کے بعد تیسرے مرحلہ کا بھی عنقریب افتتاح، چار ملین مربع میٹر رقبہ پر محیط ایرپورٹ کی تعمیر
دوبئی ۔ 6 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) اب جبکہ اسلام کے اہم رکن حج کے لئے صرف تین ماہ باقی ہیں، سعودی عرب نے 1.2 بلین امریکی ڈالرس کے مصارف سے تیار کردہ نئے ایرپورٹ کا مدینہ منورہ میں افتتاح کیا۔ اس ایرپورٹ پر سالانہ 8 ملین مسافرین کی آمدورفت کی گنجائش رکھی گئی ہے۔ شاہ سلمان نے پرنس محمد بن عبدالعزیز انٹرنیشنل ایرپورٹ کا افتتاح کیا۔ یہ ملک کا پہلا ایسا تعمیر شدہ ایرپورٹ ہے جس کی تعمیر اور نگرانکاری خانگی سیکٹر سے انجام پائے گی۔ ایرپورٹ کا پہلا مرحلہ جو چار ملین مربع میٹر کے رقبہ پر محیط ہے، وہاں سالانہ 8 ملین مسافرین کی خدمات کی سہولتیں موجود ہیں جبکہ مرحلہ دوم اور سوم کے بعد مسافرین کی تعداد بالترتیب 18 ملین اور 40 ملین ہوجائے گی۔ ایرپورٹ جنرل اتھاریٹی آف سیول اسوسی ایشن (GACA) کی ملکیت ہوگا، جس نے شہری ہوا بازی کے فروغ کیلئے اہم رول ادا کیا ہے۔ GACA کے صدر سلیمان الحمدان نے یہ بات بتائی۔ اپنی بات جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مدینہ منورہ کے اس نئے ایرپورٹ کی خوبی یہ ہیکہ وہ ان ایرپورٹس کے سلسلہ میں ایک اضافہ ہے جہاں مسافروں کی بہترین خدمات کیلئے سہولتیں موجود ہوں گی۔ یہاں اس بات کا تذکرہ دلچسپ ہوگا کہ مدینہ منورہ کا اس نئے ایرپورٹ کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ امریکہ کے باہر کسی بھی ملک میں یہ اپنی نوعیت کا پہلا ایرپورٹ ہے، جسے یو ایس کی گرین بلڈنگ کی جانب سے انرجی اینڈ انوائرنمنٹ کی قیادت کے طلائی سرٹیفکیٹس سے نوازا گیا ہے۔ ایرپورٹ میں 6 خارجی ٹرمنلس ہیں جو حج ٹرمنل سے متصل واقعہیں جس کا رقبہ 10,000 مربع میٹر ہے اور جہاں 4000 مسافرین کے بیٹھنے کی گنجائش ہے۔

TOPPOPULARRECENT