Friday , February 23 2018
Home / Top Stories / حج مسلمانوں کا اہم ترین فریضہ ، حج سبسیڈی کی برخاستگی نامناسب

حج مسلمانوں کا اہم ترین فریضہ ، حج سبسیڈی کی برخاستگی نامناسب

مرکزی حکومت کو فیصلہ پر نظر ثانی کرنے کا مطالبہ : محمد محمود علی
حیدرآباد۔17جنوری (سیاست نیو ز)ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ محمد محمود علی نے مرکزی حج کمیٹی کی جانب سے برخواست کردہ حج سبسڈی کو نامناسب اور غیر موزوں اقدام قرار دیتے ہوئے اس پر نظر ثانی کرنے کا مرکزی وزیر اقلیتی امور سے مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ حج مسلمانوں کا اہم ترین فریضہ ہے اور مسلمان حکومت کو باقاعدہ ٹیکس ادا کرتے ہیں اس لئے حج سبسڈی مسلمانوں کا حق ہے جو انہیں ملنا چاہئے اس سبسڈی کو جاری رکھنے سے مرکزی حکومت کو کسی طرح کا نقصان نہیں ہو گا ۔ محمد محمودعلی نے بتایا کہ ہندوستان کے مسلمانوں کی بڑی تعدداد معاشی طور پر نہایت پسماندہ ہے اور کئی سالوں میں اپنی آمدنی سے بچت کرتے ہوئے ادائیگی حج کیلئے رقم جمع کرنے کے بعد فریضہ حج اداکرتے ہیں اگر سبسڈی کو ختم کردیا جاتا ہے تو معاشی طور پر کمزور مسلمانوں کو حج کی ادائیگی میں دشواریاں ہوں گی اور وہ اس مقدس فریضہ کی ادائیگی سے محروم رہ جائیں گے۔ محمد محمود علی نے کہا کہ مرکزی حکومت حج سبسڈی کی اس رقم کو مسلم طبقے کی تعلیم کے لئے خرچ کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے تاہم حکومت کو چاہئے کہ وہ اس سبسڈی کو برقرار رکھتے ہوئے دیگر امور میں بجٹ کا اضافہ کرے ۔ جاریہ سال سے بحری سفر کے آغاز کا خیر مقدم کرتے ہوئے محمد محمود علی نے مرکزی وزیر اقلیتی امور مختار عباس نقوی سے درخواست کی کہ سبسڈی کے معاملے میں وہ مسلم قائدین اور مسلم تنظیموں سے رائے طلب کریں ۔ محمد محمودعلی نے سفر حج کے ٹکٹ کے اخراجات کیلئے گلوبل ٹنڈر طلب کرنے کا بھی مطالبہ کیا اور کہا کہ اس سے بھی حج کے سفر پر عائد ہونے والے اخراجات میں کمی واقع ہو سکتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT