Monday , September 24 2018
Home / شہر کی خبریں / حج ہاؤز میں صاف صفائی کے ناقص انتظامات، اسپیشل آفیسر وقف بورڈ کا جائزہ

حج ہاؤز میں صاف صفائی کے ناقص انتظامات، اسپیشل آفیسر وقف بورڈ کا جائزہ

حیدرآباد۔/21مارچ، ( سیاست نیوز) حج ہاوز واقع نامپلی کی عمارت کے مینٹننس، نگہداشت اور صفائی کے انتظامات میں لاپرواہی پر اسپیشل آفیسر وقف بورڈ جلال الدین اکبر نے عہدیداروں کی سرزنش کی۔ انہوں نے تعطیل کے باوجود آج حج ہاوز پہنچ کر صفائی کے کاموں کا جائزہ لیا۔ انہوں نے عہدیداروں کو اُگادی کی تعطیل کے باوجود صفائی کے عملے کے ساتھ مسجد کے وضو خانہ اور باتھ روم کی صفائی کو یقینی بنایا۔ انہوں نے عمارت کے اطراف و اکناف بھی مکمل صفائی کی ہدایت دی اور حج ہاوز کے احاطہ میں موجود بیت الخلاؤں کو بند کرنے کا فیصلہ کیا کیونکہ اس سے گندگی میں اضافہ ہورہا تھا۔ جناب جلال الدین اکبر نے حج ہاوز کی عمارت کی آہک پاشی اور رنگ و روغن کے علاوہ عمارت کی ایک لفٹ کو فوری درست کرنے کی بھی ہدایت دی۔ بتایا جاتا ہے کہ گزشتہ سال حج ہاوز کی عمارت کی نگہداشت کیلئے بجٹ میں ایک کروڑ روپئے مختص کئے گئے تھے تاہم صرف 27کروڑ روپئے ہی جاری کئے گئے۔ وقف بورڈ اپنی آمدنی کے اعتبار سے اس قدر مستحکم ہے کہ وہ حکومت کی امداد کے بغیر بھی عمارت کی بہتر نگہداشت کو یقینی بناسکتا ہے۔ جناب جلال الدین اکبر نے مینٹننس سے متعلق عہدیداروں سے کہا کہ عمارت میں صحت و صفائی کے انتظامات پر خصوصی توجہ دی جائے اور مسجد کے وضو خانہ اور طہارت خانوں کی روزانہ صفائی اور جراثیم کش ادویات کے چھڑکاؤ کو یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے عمارت کے مختلف حصوں کا دورہ کرتے ہوئے صورتحال کا جائزہ لیا اور عمارت کے سیلر میں بھی مستقل صفائی کے انتظامات کی ہدایت دی۔ واضح رہے کہ حج ہاوز کی تعمیر کے بعد سے آج تک اسے کلر نہیں کیا گیا اور کسی بھی عہدیدار نے اس جانب توجہ نہیں کی۔ حج سیزن کے آغاز سے قبل آہک پاشی اور کلر کے کام کو مکمل کرنے کا جناب جلال الدین اکبر نے فیصلہ کیا ہے۔ عازمین حج کی قرعہ اندازی کے موقع پر سیلر میں اچانک بدبو پھیلنے سے عازمین کو ہوئی مشکلات کے بارے میں ’’سیاست‘‘ میں رپورٹ کی اشاعت کے بعد جناب جلال الدین اکبر نے فوری کارروائی کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ عمارت کی بہتر نگہداشت اور صفائی کے انتظامات کے سلسلہ میں خصوصی ٹیم تشکیل دینے پر غور کیا جارہا ہے۔اس کے علاوہ صفائی اور مینٹننس کی ذمہ داری کسی خانگی ادارہ کے سپرد کرنے پر بھی تجاویز طلب کی جائیں گی۔

TOPPOPULARRECENT