Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / حج ہاوز کی عمارت کی نگہداشت میں عہدیداروں کی لاپرواہی

حج ہاوز کی عمارت کی نگہداشت میں عہدیداروں کی لاپرواہی

پائپ لائن پھٹ پڑی ، لفٹ میں پانی سے شارٹ سرکٹ ، برقی سربراہی منقطع
حیدرآباد ۔ 15 ۔  فروری (سیاست نیوز) حج ہاؤز نامپلی کی عمارت کی نگہداشت میں عہدیداروںکی لاپرواہی کے نتیجہ میں آج مسلسل دوسرے دن عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ عمارت کی پائپ لائین پھٹ جانے سے نہ صرف لفٹ میں پانی داخل ہوگیا بلکہ شارٹ سرکٹ سے برقی سربراہی منقطع ہوگئی۔ اگرچہ یہ واقعہ کل شام پیش آیا تھا لیکن آج بھی عمارت کے کئی حصوں میں برقی سربراہی بحال نہیں ہوسکی۔ اس کے علاوہ عمارت کے دو اہم لفٹ آج بھی بند رہے جو آٹھویں منزل تک جاتے ہیں کیونکہ لفٹ میں پانی بھرچکا ہے ۔ پانی کی نکاسی کیلئے موٹر کا استعمال کرنا پڑ ے گا ۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ پانی کی نکاسی کے باوجود بھی فوری طور پر لفٹ کو شروع نہیں کیا جاسکتا۔ عمارت کی پائپ لائین پھٹ جانے سے نہ صرف کئی دفاتر میں پانی داخل ہوگیا بلکہ برقی تاروں میں پانی گزرنے سے شارٹ سرکٹ ہوا ہے ، کئی دفاتر آج بھی برقی سربراہی سے محروم رہے۔ عمارت کی نگہداشت اور مینٹننس کی ذمہ داری وقف بورڈ کی جس نے ایک خانگی ادارہ کو مینٹننس کا کام سونپ دیا۔ بتایا جاتاہے کہ وقتاً فوقتاً عمارت میں موجود سہولتوں کی جانچ نہیں کی جاتی جس کے نتیجہ میں وقتاً فوقتاً اس طرح کے واقعات پیش آرہے ہیں۔ صرف حج سیزن کے وقت ہی حج کمیٹی کی جانب سے مینٹننس کا کام انجام دیا جاتا ہے ۔ حالانکہ یہ کام وقف بورڈ کا ہے ۔ وقف بورڈ کے جن عہدیداروں کے ذمہ عمارت کی نگہداشت کا کام ہے ، وہ اس لاپرواہی کے بارے میں کچھ بھی کہنے سے قاصر ہے ۔ گزشتہ دو دن سے ضعیف افراد اور طلبہ کو سیڑھیوں کے راستہ چھٹویں منزل تک جانا پڑ رہا ہے ۔ اسکالرشپ ، شادی مبارک اور دیگر اسکیمات کے دفاتر چھٹویں منزل پر ہے ۔ اسی طرح حج کمیٹی اور وقف بورڈ کے معاملات کے لئے دوسری ، تیسری اور چوتھی منزل تک سیڑھیوں کے راستے جانا عوام کیلئے انتہائی تکلیف دہ بن چکا ہے ۔ کئی خواتین کو لفٹ بند ہونے کے باعث گھر واپس جانا پڑا کیونکہ وہ سیڑھیوں کے راستہ اوپری منزل پہنچنے سے قاصر ہے۔

TOPPOPULARRECENT