Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / حج 2016 کیلئے بعض ٹنڈرس کو اے پی و تلنگانہ حج کمیٹی کی منظوری

حج 2016 کیلئے بعض ٹنڈرس کو اے پی و تلنگانہ حج کمیٹی کی منظوری

عازمین کو غدا کی فراہمی کیلئے ٹنڈر دوبارہ طلب کرنے  ٹنڈرس کمیٹی اجلاس میں فیصلہ
حیدرآباد۔/26جولائی، ( سیاست نیوز) حج 2016کیلئے تلنگانہ اور آندھرا پردیش حج کمیٹی نے بعض ٹنڈرس کو منظوری دے دی ہے۔ ٹنڈر کمیٹی کی موجودگی میں آج تین اہم کاموں کے ٹنڈرس کی کشادگی عمل میں آئی۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور کے علاوہ ڈپٹی ڈائرکٹر اقلیتی بہبود سبھاش چندر گوڑ، جنرل منیجر اقلیتی فینانس کارپوریشن دلاور علی اور جنرل منیجر آندھراپردیش اقلیتی فینانس کارپوریشن لیاقت علی اس کمیٹی میں شامل تھے۔ کمیٹی نے عازمین حج کے طعام، حج کیمپ کیلئے سپلائینگ کمپنی اور مینٹننس سے متعلق ٹنڈرس طلب کئے تھے۔ طعام کیلئے صرف 2 ٹنڈرس داخل کئے گئے جن میں ایک ٹنڈر گذار کو ضروری قواعد کی عدم تکمیل پر مسترد کردیا گیا جبکہ دوسرے ٹنڈر گذار نے جو تخمینہ پیش کیا اسے ٹنڈر کمیٹی نے قبول نہیں کیا۔ ٹنڈر گذار نے ایک عازم کیلئے ایک یوم کا خرچ گذشتہ سال سے زیادہ پیش کیا تھا جسے کمیٹی نے قبول نہیں کیا اور یہ ٹنڈر دوبارہ طلب کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ سپلائنگ کمپنی کیلئے دو ٹنڈرس داخل کئے گئے تھے جس میں ایک نے 20 لاکھ روپئے کا تخمینہ پیش کیا جبکہ دوسرے ٹنڈر گذار این ایم سپلائینگ کمپنی نے صرف 5 لاکھ 98 ہزار 990 روپئے کا تخمینہ پیش کیا جسے قبول کرلیا گیا۔کمپنی کے نمائندہ محمد توفیق نے جو گذشتہ سال بھی انتہائی کم قیمت پر حج کیمپ کا کام کرچکے ہیں بتایا کہ وہ عازمین کی خدمت کے جذبہ کے تحت کام کررہے ہیں۔ گذشتہ سال انہوں نے ہنگامی حالات میں بارش سے بچاؤ کیلئے خصوصی اضافی ٹینٹ تعمیر کیا تھا۔ جاریہ سال بھی واٹر پروف ٹینٹ کے علاوہ دیگر تمام سہولتوں کی فراہمی ان کی ذمہ داری رہے گی۔ کیمپ کے مینٹننس کا ٹنڈر دکن اینڈ کمپنی کو 4 لاکھ 25 ہزار روپئے میں منظور کیا گیا۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی ایس اے شکور نے بتایا کہ طعام کے ٹنڈر کے ساتھ ٹائیلٹ و باتھ روم کی تعمیر کیلئے علحدہ ٹنڈرس طلب کئے جائیں گے۔ زیر تعمیر کامپلکس میں 59 عارضی ٹائیلٹ و باتھ رومس کی تعمیر کا منصوبہ ہے۔ اسی دوران تلنگانہ وقف بورڈ نے عمارت میں صفائی اور دیگر مینٹننس کے کاموں کا ابھی تک آغاز نہیں کیا جبکہ سکریٹری اقلیتی بہبود عمر جلیل نے عمارت کا دورہ کرتے ہوئے اندرون ایک ہفتہ تمام ضروری کاموں کی تکمیل کی ہدایت دی تھی۔ بتایا جاتا ہے کہ وقف بورڈ کی کارکردگی سے ناراض سکریٹری اقلیتی بہبود نے دوبارہ حج ہاوز کا دورہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حج کیمپ کیلئے حج ہاوز سے متصل زیر تعمیر عمارت کے 4 فلورس استعمال کرنے کی تجویز ہے اور ہر فلور پر ٹائیلٹ اور باتھ روم کا انتظام رہے گا۔ گراؤنڈ فلور پر طعام کے انتظامات کئے جائیں گے۔ اسی عمارت کے سیلر کو استعمال کرنے کا جائزہ لیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT