Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / حج 2016 کیلئے تلنگانہ اور آندھرا پردیش حج کمیٹیوں کی تیاریوں کا آغاز

حج 2016 کیلئے تلنگانہ اور آندھرا پردیش حج کمیٹیوں کی تیاریوں کا آغاز

حج ہاوز میں 42 محکمہ جات کے عہدیداروں کا اجلاس ، جناب محمد محمود علی ڈپٹی چیف منسٹر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 4۔ اگست (سیاست  نیوز) حج 2016 ء کے لئے تلنگانہ اور آندھراپردیش حج کمیٹیوں نے  اپنی تیاریوں کا آغاز کردیا ہے۔ 19 اگست سے شروع ہونے والے حج کیمپ کے انتظامات کو قطعیت دینے کیلئے آج حج ہاؤز میں مختلف محکمہ جات کے عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس منعقد کیا گیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے اجلاس کی صدارت کی۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل ، صدرنشین آندھراپردیش حج کمیٹی مومن احمد اور سنٹرل حج کمیٹی کے رکن محترمہ طیبہ آفندی نے شرکت کی۔ اسپیشل آفیسر تلنگانہ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے حج کیمپ کے انتظامات کے سلسلہ میں ایجنڈہ میں طئے شدہ امور کی بنیاد ہر محکمہ کے عہدیداروں سے موثر انتظامات کا تیقن حاصل کیا۔ تمام محکمہ جات نے حج کیمپ کے کامیاب انعقاد میں مکمل تعاون کا یقین دلایا۔ 19 اگست کی صبح سے کیمپ میں عازمین حج کی آمد کا آغاز ہوجائے گا۔ اور 21 اگست کو ایر انڈیا کی پہلی پرواز جدہ کیلئے روانہ ہوگی ۔ 28 اگست تک ایرانڈیا کی جملہ 15 پروازیں تلنگانہ اور آندھراپردیش کے عازمین حج کو جدہ پہنچائے گی۔ عازمین حج کو حالت احرام میں روانہ کیاجائے گا۔ حجاج کرام کی واپسی کا 4 اکتوبر سے آغاز ہوگا اور 11 اکتوبر کو آخری قافلہ واپس ہوگا۔ سنٹرل حج کمیٹی سے زائد کوٹہ حاصل ہونے کی ضرورت میں ایر انڈیا نے زائد پروازیں چلانے سے اتفاق کرلیا ہے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے تمام محکمہ جات سے خواہش کی کہ وہ گزشتہ سال سے بہتر انتظامات کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ حکومت عازمین حج کی بہتر سے بہتر خدمت کرنے کا جذبہ رکھتی ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے عازمین حج کی خدمت کو ہمیشہ اولین ترجیح دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ 42 محکمہ جات کے عہدیداروں نے اجلاس میں شرکت کی ۔ محمود علی نے ایر انڈیا کی خدمات کو سراہا۔ اور کہا کہ گزشتہ سال ایر انڈیا نے عازمین کی جو خدمت کی ہے، وہ توقع سے کہیں زیادہ تھی۔ انہوں نے بتایا کہ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں بھی حج کمیٹی بہتر انتظامات کو یقینی بنائے گی۔ محمود علی نے کہا کہ تلنگانہ حج کمیٹی ہر سال دیگر محکمہ جات کے اشتراک سے کامیاب حج کیمپ منعقد کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتی بہبود کے عہدیدار کیمپ کے انعقاد کے لئے باہم تال میل کے ذریعہ کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے عہدیداروں کو مشورہ دیا کہ وہ تنقیدوں کی پرواہ کئے بغیر اپنے کام پر توجہ دیں۔ سکریٹری اقلیتی بہبود عمر جلیل نے بتایا کہ حج ہاؤز کے تمام ضروری کاموں کی تکمیل آئندہ 24 گھنٹوں میں مکمل کرلی جائے گی ۔ حج ہاؤز سے متصل زیر تعمیر عمارت میں عازمین حج کیلئے 57 عارضی ٹائلیٹس تعمیر کئے جائیں گے ۔ پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ ایر انڈیا نے ضرورت پڑنے تک فلائیٹس چلانے سے اتفاق کیا ہے ۔ ایر انڈیا نے گزشتہ سال کی طرح مقررہ وقت پر پروازوں کا تیقن دیا ۔ انہوں نے بتایا کہ ایرپورٹ کو منتقلی کیلئے آر ٹی سی کی 9 بسوں کا انتظام کیا گیا ہے۔ ایر انڈیا کی جانب سے 10 کاؤنٹرس لگائے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ 22 کیلو گرام وزنی دو بیاگ اور 10 کیلو گرام کا ہینڈ کیری رکھنے کی ہر عازم کو اجازت رہے گی ۔ اس سے زائد وزن کو قبول نہیں کیا جائے گا۔ کسٹمس حکام کے مطابق جاریہ سال ہر عازم حج کو 25 ہزار ہندوستانی کرنسی اور 5 ہزار ڈالر یا اس کی مالیتی کرنسی لے جانے کی اجازت رہے گی۔ راجیو گاندھی انٹرنیشنل ایرپورٹ پر حج ٹرمینل کی تیاریوں کا جائزہ لینے کیلئے ڈپٹی چیف منسٹر عہدیداروں کے ساتھ 7 اگست کو دورہ کریں گے۔ جائزہ اجلاس میں چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ ، جوائنٹ کمشنر پولیس سائبر آباد اسٹیفن رویندرا ، اے سی پی مادھا پور پی اشوک، اے سی پی سی اے آر ہیڈ کوارٹر ریاض الحق ، ایڈیشنل ڈی سی پی ایم سرینواس ، سینئر کمانڈنٹ سی آئی ایس ایف ، امید دارور، ڈائرکٹر آئی پی ایم ، ڈاکٹر شیوالیلا ، اسپیشل مینجر ایر انڈیا اے رام بابو ، اڈوائزر ایر انڈیا ڈی مرلی ، ڈپٹی جنرل مینجر ایر انڈیا اے ہری نارائن ، اے جی ایم ایر انڈیا ایم اے معز ، امیگریشن آفیسر بی این وی ایس مورتی، اور کسٹمس عہدیداروں جنید سالک، ساجد غوری اور دیگر محکمہ جات کے عہدیداروں نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT