Tuesday , August 21 2018
Home / شہر کی خبریں / حج 2018 کیلئے ادخال درخواست کی آخری تاریخ 22 دسمبر مقرر

حج 2018 کیلئے ادخال درخواست کی آخری تاریخ 22 دسمبر مقرر

آندھرا پردیش کمیٹی کو 1851 درخواستوں کی وصولی ، آن لائن سسٹم سے درخواست گذاروں کو مشکلات
حیدرآباد۔ 15 ڈسمبر (سیاست نیوز) حج 2018ء کے لیے آندھراپردیش حج کمیٹی کو آج شام تک صرف 1851 درخواستیں موصول ہوئی ہیں جبکہ ریاست سے 3 ہزار عازمین کی روانگی کی گنجائش ہے۔ سنٹرل حج کمیٹی سے اگرچہ حج کوٹہ الاٹ نہیں کیا گیا تاہم گزشتہ سال کے اعتبار سے 3 ہزار عازمین کا کوٹہ الاٹ کیے جانے کا امکان ہے۔ آندھراپردیش حج کمیٹی نے درخواستوں کے ادخال کے لیے صرف آن لائین سسٹم کو برقرار رکھا ہے جس کے سبب عوام کو دشواریوں کا سامنا ہے اور کم تعداد میں درخواستوں کا ادخال اس کی اہم وجہ ہے۔ برخلاف اس کے تلنگانہ حج کمیٹی نے خصوصی کائونٹرس قائم کرتے ہوئے شہر اور اضلاع میں نہ صرف درخواست فارم جاری کیے بلکہ ان کی خانہ پری اور وصولی کا انتظام کیا جس کے نتیجہ میں ابھی تک 13 ہزار سے زائد درخواستیں داخل کی گئی ہیں۔ آندھراپردیش حج کمیٹی کے ترجمان نے عازمین حج سے اپیل کی ہے کہ وہ آن لائین درخواستیں داخل کریں اور درخواستوں کے ادخال کی آخری تاریخ 22 ڈسمبر ہے۔ آج شام تک موصولہ 1851 درخواستوں میں انتت پور سے 184، چتور 214، مشرقی گوداوری 33، گنٹور 319، کڑپہ 227، کرشنا 164، کرنول 383، نیلور 91، پرکاشم 66، سریکاکلم 7، وشاکھا پٹنم 104، وجئے نگرم 21 اور مغربی گوداوری سے 38 درخواستیں داخل ہوئی ہیں۔ مقررہ کوٹے سے کم درخواستوں کی وصولی کی صورت میں تمام درخواستوں کو قرعہ اندازی کے بغیر منتخب قرار دیا جائے گا۔ مرکزی حج کمیٹی نے جنوری کے پہلے ہفتے میں قرعہ اندازی کا فیصلہ کیا ہے۔ نئی حج پالیسی کے تحت ہر شخص کو زندگی میں ایک مرتبہ حج کمیٹی سے روانگی کی سعادت حاصل ہوگی۔ درخواست گزاروں کے پاسپورٹ 14 فبروری 2019ء تک کارکرد ہونے چاہئیں۔ 70 سال یا اس سے زائد عمر کے درخواست گزاروں کو محفوظ زمرے کے تحت قرعہ اندازی کے بغیر منتخب قرار دیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT