Thursday , September 20 2018

حدیث

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ’’جب تمہارے قائد و سردار وہ لوگ ہوں، جو تم میں کے بہترین لوگ ہیں، تمہارے دولت مند لوگ سخی ہوں اور تمہارے معاملات باہمی مشوروں سے انجام پاتے ہوں (یعنی مسلمان ایک مرکز پر متحد و متفق ہوں اور اپنے تمام معاملات و امور ایک رائے ہوکر طے کرتے ہوں) تو اس

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ’’جب تمہارے قائد و سردار وہ لوگ ہوں، جو تم میں کے بہترین لوگ ہیں، تمہارے دولت مند لوگ سخی ہوں اور تمہارے معاملات باہمی مشوروں سے انجام پاتے ہوں (یعنی مسلمان ایک مرکز پر متحد و متفق ہوں اور اپنے تمام معاملات و امور ایک رائے ہوکر طے کرتے ہوں) تو اس وقت زمین کی پشت تمہارے لئے زمین کے پیٹ سے بہتر ہوگی (یعنی ایسے مبارک زمانہ میں زندگی موت سے بہتر ہوگی، کیونکہ اس صورت میں تمھیں کتاب و سنت کے مطابق عمل کرنے اور دین کی راہ پر چلنے کی توفیق نصیب ہوگی، اور ظاہر ہے وہ لوگ نہایت خوش بخت ہیں، جنھیں حسن عمل کے ساتھ طویل زندگی ملے) اور جب تمہارے قائد سردار وہ لوگ ہوں، جو تم میں کے بدترین (یعنی فاسق و فاجر اور ظالم) لوگ ہیں، تمہارے دولت مند لوگ بخیل ہوں اور تمہارے معاملات کی باگ ڈور عورتوں کے ہاتھ میں ہو، تو اس وقت زمین کا پیٹ تمہارے لئے زمین کی پشت سے بہتر ہوگا (یعنی ایسے زمانہ میں مرنا، جینے سے بہتر ہوگا)‘‘۔ (ترمذی)

حدیث شریف کا ظاہری اسلوب یہ تقاضا کرتا ہے کہ جب پہلے جز میں یہ فرماتا گیا ہے کہ ’’تمہارے معاملات باہمی مشوروں سے طے پاتے ہوں‘‘ تو دوسرے جز میں یوں فرمانا چاہئے تھا کہ ’’تمہارے معاملات باہمی اختلاف رائے کا شکار ہو جاتے ہوں‘‘۔ لیکن اس طرح فرمانے کی بجائے یہ فرمانا کہ ’’تمہارے معاملات کی باگ ڈور عورتوں کے ہاتھوں میں ہو‘‘۔ گویا اس طرف اشارہ کرنا ہے کہ آپس میں پیدا ہونے والے اختلافات اور تنازعات عام طورپر عورتوں کی اتباع کرنے اور ان کے کہنے پر چلنے کی وجہ سے پیدا ہوتے ہیں!۔ اسی طرح وہ مرد بھی عورتوں ہی کے حکم میں ہیں، جو ان ہی جیسے احوال رکھتے ہیں، یعنی جن مردوں پر جاہ و مال کی محبت کا غلبہ ہوتا ہے اور جو یہ نہیں جانتے کہ کیا چیز دین کو نقصان پہنچاتی ہے، لہذا ایسے مردوں کو بھی اپنا رہنما بنانا اور اپنی زمام کار ان کو سونپ دینا، پورے معاشرہ کو تباہی و خرابی سے دو چار کرنا ہے۔

TOPPOPULARRECENT