Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / حرمین شریفین کے انتظامیہ میں بیرونی مداخلت ناقابل قبول

حرمین شریفین کے انتظامیہ میں بیرونی مداخلت ناقابل قبول

ازل سے سعودی حکمران ہی خادم حرمین شریفین کہلائے ان کو نہیں ہٹایا جاسکتا
حیدرآباد ۔ 9 ۔ اگست : ( راست ) : صدر نشین انڈیا عرب فرینڈ شپ فاونڈیشن جناب جابر پٹیل نے سعودی حکمرانوں کے اختیارات میں مداخلت کرنے کے ناپاک منصوبوں اور سازشوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مکہ معظمہ اور مدینہ منورہ مسلمانوں کی عبادت گاہیں ہیں مسلمان رحمن کے مہمان اور مہمان رسول بن کر یہاں آتے ہیں ۔ سعودی حکمران عازمین عمرہ و عازمین حج کی ضیافت کرتے ہیں ۔ ان کو ممکنہ سہولت پہنچانے مہمانوں کا ادب و احترام و اپنا اولین فریضہ سمجھتے ہیں ۔ آج تک سعودی حکمرانوں کے سوا کسی ملک کو حرمین کی خدمت کے لیے اللہ تعالی کی جانب سے قبول نہیں کیا گیا ۔ اب ایک فتنہ سر اٹھا رہا ہے کہ تمام ممالک کو سعودی مملکت میں مداخلت کرنے اور حرمین شریفین کی خدمت کا موقع دیا جائے بلکہ ایران کی جانب سے یہ مطالبہ کیا گیا کہ ارض مقدس میں احتجاجی جلسے منعقد کرنے کا اہتمام کیا جائے ۔ سادی دنیا میں امن پسند علاقہ سعودی عربیہ ہے اور سعودی حکمرانوں کو منجانب اللہ حمایت حاصل ہے ۔ کوئی سعودی حکمرانوں کے اختیارات نہیں چھین سکتا ۔ حضور اکرم ﷺ کی ولادت سے 55 دن قبل ابرہہ نے کعبتہ اللہ پر حملہ کرنے کے ارادے سے ہاتھیوں کی فوج لے کر چڑھائی کی اللہ تعالی نے ابابیل بھیج کر چھوٹی چھوٹی کنکریوں کے ذریعہ بری طرح ہلاک کردیا ۔ سورہ فیل میں اسی واقعہ کی تفصیل ہے ۔ اس لیے وہ لوگ جو بین الاقوامی اتحاد کا سہارا لے کر سعودی اختیارات پر حملہ کرنا چاہتے ہیں وہ نوشتہ دیوار پڑھیں لیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT