Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / حرم شریف حادثہ میں مچھلی پٹنم کے دو عازمین کا انتقال

حرم شریف حادثہ میں مچھلی پٹنم کے دو عازمین کا انتقال

حکومت آندھراپردیش کو واقف کروادیا گیا ۔ پروفیسر ایس اے شکور کا بیان
حیدرآباد ۔ 23 ؍ ستمبر (پریس نوٹ) مچھلی پٹنم ضلع کرشنا آندھراپردیش سے تعلق رکھنے والے دو عازمین حج جناب محمد عبدالقادر اور ان کی اہلیہ محترمہ فاطمہ بیگم جمعہ کے دن حرم شریف میں پیش آئے حادثہ میں جاں بحق ہوگئے ۔ اسپیشل آفیسر تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے یہ اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے قونصل جنرل جدہ جناب بی ایس مبارک اور چیف ایگزیکیٹو آفیسر مرکزی حج کمیٹی جناب عطاء الرحمن سے بات کی جس پر قونصل جنرل جدہ نے ان کی موت کی توثیق کی اور بتایا کہ انکے ایک رشتہ دار جناب عبدالمقیت مکہ میں تھے ان کو بلوا کر نعشوں کی شناخت کروالی گئی ۔ اس واقعہ سے انہوں نے ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ جناب محمد محمودعلی ‘ وزیر اقلیتی بہبود آندھراپردیش پلے رگھوناتھ ریڈی اور سکریٹری اقلیتی بہبود تلنگانہ مسٹر سید عمر جلیل کے علاوہ آندھراپردیش سکریٹری محکمہ اقلیتی بہبود جناب شیخ محمد اقبال کو واقف کروایا اور بتایا کہ یہ دونوں عازمین کے کور نمبر APF-478-4-0 کے تحت اپنے دیگر دو خاتون رشتہ داروں کے ہمراہ 6 ستمبر کو حیدرآباد سے مکہ معظمہ روانہ ہوئے تھے ۔ جمعہ کی شام یہ دونوں اپنے دیگر رشتہ داروں کو روم میں چھوڑ کر عمرہ کی نیت سے حرم شریف پہنچے اور طواف کے بعد سعی کیلئے گئے تھے کہ یہ حادثہ پیش آیا اور دونوں جان بحق ہوگئے ۔ قبل ازیں ان کی گمشدگی کی اطلاع درج کروائی تھی اور تلاش جاری تھی کہ انکے انتقال کی اطلاع ملی ۔ پروفیسر شکور نے مچھلی  پٹنم میں رشتہ داروں سے بات کرکے اظہار تعزیت کیا اور مرحومین کی مغفرت اور ان کی جنت میں اعلی درجات عطا کرنے دعا کی ۔ بتایا گیا ہے  انکے دو کمسن بچے چھ سال اور تین سال کے ہیں اور وہ ان بچوں کو رشتہ داروں کے پاس چھوڑ کر فریضہ حج کیلئے گئے تھے ۔ جس وقت حرم شریف میں یہ المناک حادثہ پیش آیا وہ اسی علاقہ میں تھے اور ان کو شدید زخمی حالت میں دواخانہ منتقل کیا گیا ۔ آج صبح ان کی نعشوں کی شناخت ہوئی ۔

TOPPOPULARRECENT