Tuesday , September 25 2018
Home / اضلاع کی خبریں / حسن آباد میں ملازمین و پولیس پر خودسپرد نکسلائیٹ کا حملہ

حسن آباد میں ملازمین و پولیس پر خودسپرد نکسلائیٹ کا حملہ

عوام میں خوف و ہراس ‘ خاطی کے خلاف روڈی شیٹ کھولنے کا اعلان

حسن آباد۔ 13 ؍ مئی (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حسن آباد ریوینیو ڈیویژن کے موضع نندارم منڈل اکناپیٹ میں کل مجوزہ رعیتو بندھو اسکیم کے چیکس و پٹہ دار پاس بکس تقسیم کی تقریب میں اس وقت سخت کشیدگی پھیل جب نشے میں دھت ایک خودسپرد نکسلائیٹ بانوت سنتوش کمار سابق دلم کمانڈر نے شدید برہمی میں چیخ و پکار کرتے ہوئے پٹہ دار پاس بکس تقسیم کرنے والی ٹیم کے ارکان سے الجھ گیا ۔ نیزہاتھا پائی شروع کر دی جس کے نتیجہ میں عوام و ملازمین میں شدید خوف و ہراس پیدا ہوگیا ۔ تفصیلات کے بموجب موضع نندارم منڈل اکنا پیٹ سے ملحقہ قبائیلی تانڈے میں خود سپرد نکسلائیٹ سنتوش کمار کے والد سوملانائک کو 4 ایکڑ تری اراضی موجود ہے ۔ تاہم نئے پٹہ دار پاس بکس میں سہواً 2 ایکڑ ہی درج ہوا ۔ نیز 2 ایکڑ کے ہی مبلغ 8 ہزار روپئے پٹہ دار سوملا نائک کو دیئے گئے ۔ جس کے اطلاع پا کر سنتوش کمار نے بھاری مقدار میں مئے نوشی کرنے کے بعد پاس بکس تقسیم کرنے والی ٹیم سے تلخ کلامی کرتے ہوئے وجوہات طلب کی۔ جس پر ٹیم لیڈر وینو مادھو نے غلطی کی تصحیح کے لئے علحدہ کاؤنٹر سے رجوع ہو کر تحریری شکایت درج کروانے کا مشورہ دیا جس کے سبب نشے میں مدہوش خودسپرد نکسلائیٹ بانوت سنتوش کمار نے وینو مادھو کا کالر پکڑ گرا کر مارپیٹ شروع کر دی ۔ جس کو دیکھ کر دیگر ملازمین بھی بری طرح خوفزدہ ہوگئے ۔ عینی شاہدین کی جانب سے اکناپیٹ سب انسپکٹر پاپیا نائک کو اطلاع دینے پر وہ فوری جائے واقعہ پر یہنچ گئے تاہم سنتوش کمار نامی خودسپرد نکسلائیٹ کمانڈر نے شدید برہمی میں آنے والے سب انسپکٹر پاپیا نائک پر اچانک حملہ کرتے ہوئے دونوں کے مابین تین منٹ تک ہاتھا پائی جا ری رہی ۔ پاس بکس تقسیم کرنے والے ملازمین و سب انسپکٹر پر ہوئے حملے کے اطلاع ملتے ہی حسن آباد سرکل انسپکٹر سی ایچ سرینواس جی راؤ نے بھاری مسلح پولیس جمعیت کے ساتھ نندرام پاس بکس تقسیم مرکز پہنچ خاطی خودسپرد نکسلائیٹ بانوت سنتوش کمار کو اپنی حراست میں لیکر مختلف ناقابل ضمانت دفعات کے تحت کیس درج کرنے و روڈی شیٹ کھولنے کا اعلان کیا ۔ نیز زائد از 10 منٹ تک چلے حملے و جوابی حملے کو روک کر حالات کو قابو میں کرلیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT