Saturday , November 25 2017
Home / ہندوستان / حسن علی کے خلاف بلیک منی کیس کی تحقیقات انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ کے 6شہروں میں دھاوے

حسن علی کے خلاف بلیک منی کیس کی تحقیقات انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ کے 6شہروں میں دھاوے

نئی دہلی۔/9فبروری، ( سیاست ڈاٹ کام ) انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ نے آج حسن علی خاں کے خلاف منی لارڈنگ اور بلیک منی کیس کی تحقیقات میں تیزی پیدا کرتے ہوئے تقریباً نصف درجن شہروں بشمول پونے میں ان کے گھوڑوں کے فارم کے مالک اور دیگر ساتھیوں کی قیامگاہوں کی تلاشی لی۔ قبل ازیں ایجنسی نے سال 2011 میں خان اور ان کے دیگر ساتھیوں کے خلاف منی لانڈرنگ کے الزامات عائد کئے تھے اور مختلف شہروں بشمول ممبئی، پونے، گرگاؤں اور کولکتہ میں ان کی قیامگاہوں اور دفاتر پر دھاوے کئے تھے۔ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ کے عہدیداروں نے بتایا کہ تقریباً 30اہلکاروں پر مشتمل ٹیموں نے حسن علی کیس میں 6شہروں پر محیط 9مقامات کی تلاشی لی۔ انہوں نے بتایا کہ یہ کارروائی مذکورہ کیس کے احیاء اور ممبئی کی عدالت میں زیر سماعت مقدمہ کیلئے مزید ثبوتوں کو اکٹھا کرنے کی خاطر شروع کی گئی ہے تاکہ اس کیس کو جلد از جلد منطقی انجام تک پہنچایا جاسکے۔ واضح رہے کہ حسن علی خاں منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت طویل عرصہ جیل میں گذارنے کے بعد گذشتہ سال اگسٹ میں ضمانت پر رہا ہوئے تھے اور فی الحال ممبئی اور پونے میں اپنی رہائش گاہوں میں قیام پذیر ہیں۔ واضح رہے کہ انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ نے ٹیکس چوری کا الزام عائد کرتے ہوئے حسن علی خاں کو 50,000 کروڑکا ٹیکس ادا کرنے کیلئے نوٹس جاری کی ہے جوکہ انکم ٹیکس  چوری کا سب سے بڑا کیس ہے۔ علاوہ ازیں ان پر پاسپورٹ ایکٹ کی خلاف ورزی کا بھی الزام ہے جبکہ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ بیرونی زر مبادلہ قانون ( فاریکس ) کی خلاف ورزی کی تحقیقات کررہا ہے جس میں خاں اور ان کے ساتھی ملوث ہیں اور یہ کیس سال 2011 سے ممبئی کی ایک عدالت میں معرض التواء ہے۔

TOPPOPULARRECENT