Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / حسین ساگر میں جزائر بنانے ایچ ایم ڈی اے کی منصوبہ بندی

حسین ساگر میں جزائر بنانے ایچ ایم ڈی اے کی منصوبہ بندی

تفریح کے طور پر فروغ دینے عنقریب پراجکٹ کو قطعیت ، کمشنر مسٹر چرنجیولو کا بیان
حیدرآباد۔13جولائی (سیاست نیوز) حسین ساگر میں حیدرآباد میٹروپولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی کی جانب سے دو جزائر بنائیں جائیں گے اور ان جزائر کی تعمیر کے بعد انہیں تفریحی مقام کے طور پر فروغ دیا جائے گا۔ ایچ ایم ڈی اے کی جانب سے کی جانے والی منصوبہ بندی کے مطابق سنجیویا پارک اور جل وہار کے درمیان پانی کے بیچ موجود اونچے ٹیلوں و زمین کے حصہ کا استعمال کرتے ہوئے حسین ساگر جھیل میں جزیرے بنائیں جائیں گے۔کمشنرحیدرآباد میٹرو پولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی مسٹر ٹی چرنجیولو نے بتایا کہ ان دونوں جزائر کی ترقی و تعمیر کیلئے کوئی مشکل نہیں ہوگی اور نہ ہی کوئی بھاری بجٹ درکار ہوگا بلکہ جھیل کے اطراف موجود مٹی اور تودوں کے استعمال سے یہ مصنوعی جزائر بنائے جا سکتے ہیں اور اس پراجکٹ کو شروع کرنے کے بعد اندرون 5ماہ اس کی تکمیل کرلی جائے گی لیکن اس سلسلہ میں قطعی فیصلہ کیا جانا باقی ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ حکومت سے منظوری کے سلسلہ میں کاروائی شروع کردی گئی ہے اور کہا جا رہا ہے کہ حسین ساگر جھیل میں جزائر کی تعمیر و ترقی سے سیاحوں کو نیا تجربہ ہوگا اور 5.7مربع کیلو میٹر کی اس وسیع جھیل میں جزائر کی تعمیر سے سیاحوں کی تعداد میں اضافہ ہوگا۔ کمشنر حیدرآباد میٹروپولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی نے بتایا کہ ان جزائر کی تعمیر کیلئے جھیل کے اندرونی حصہ اور اطراف میں موجود مٹی ہی انتہائی کارکرد ثابت ہوتی ہے اور اسی لئے اس پراجکٹ پر کوئی زیادہ مصارف نہیں آئیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ حسین ساگر کو سیاحتی مرکز کے طور پر فروغ دینے کے لئے متعدد اقدامات کئے جارہے ہیں اور شہر کے وسط میں موجود اس جھیل کو خوبصورت بنانے کے اقدامات کئے جارہے ہیں اورجھیل کی مکمل صفائی کو ممکن بنانے کے ساتھ اوپری سطح پر موجود گندگی کو دور کرنے کیلئے بھی منصوبہ تیار کیا جا رہا ہے۔ تشکیل تلنگانہ کے بعد ریاستی حکومت کی جانب سے حسین ساگر جھیل کو خوبصورت بنانے کے کئی منصوبوں کا اعلان کیا گیا لیکن اب تک کسی ایک منصوبہ کو عملی جامہ نہیں پہنایا گیا لیکن اب جو منصوبہ تیار کیا گیا ہے توقع ہے کہ اس منصوبہ کو عملی جامہ پہنانے میں کوئی رکاوٹ پیدا نہیں ہوگی اور نہ ہی بجٹ کی مشکلات رہیں گی اسی لئے اس منصوبہ کو بہت جلد شروع کئے جانے کا امکان ہے۔ مسٹر ٹی چرنجیولونے بتایا کہ اس پراجکٹ سے جھیل کو کوئی نقصان نہیں ہوگا بلکہ جھیل کی خوبصورتی میں اضافہ ہوگا اور سیاح جھیل میں بنے ان جزائر تک بغرض تفریح پہنچ سکیں گے۔ عہدیداروں کے مطابق ان جزائر کی تعمیر کے بعد ان پر ہریالی اور شجرکاری کا بھی منصوبہ ہے تاکہ انہیں حقیقی جزائر کے طرز پر ترقی دی جاسکے۔

TOPPOPULARRECENT