Sunday , June 24 2018
Home / ہندوستان / حصول اراضی بل مخالف کسان، موافق کارپوریٹ

حصول اراضی بل مخالف کسان، موافق کارپوریٹ

نئی دہلی ، 7 مارچ (سیاست ڈاٹ کام ) جماعت اسلامی ہند نے آج بی جے پی حکومت کی قانون حصولیابی اراضی 2013ء میں مجوزہ ترامیم کی پُرزور مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ نیا بل کسانوں کے حقوق ’’پامال‘‘ کرتا اور کارپوریٹ اداروں کو زیادہ فوائد دیتا ہے۔ ’’مجوزہ بل میں کسانوں اور مالکین اراضی کے حقوق گھٹا دیئے گئے ہیں تاکہ ترقی کے نام پر کارپوریٹس کو ز

نئی دہلی ، 7 مارچ (سیاست ڈاٹ کام ) جماعت اسلامی ہند نے آج بی جے پی حکومت کی قانون حصولیابی اراضی 2013ء میں مجوزہ ترامیم کی پُرزور مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ نیا بل کسانوں کے حقوق ’’پامال‘‘ کرتا اور کارپوریٹ اداروں کو زیادہ فوائد دیتا ہے۔ ’’مجوزہ بل میں کسانوں اور مالکین اراضی کے حقوق گھٹا دیئے گئے ہیں تاکہ ترقی کے نام پر کارپوریٹس کو زیادہ فوائد دیئے جائیں،‘‘ جماعت کے اعلیٰ رہنماؤں نے ایک بیان میں یہ بات کہی۔ نیز یہ کہ کانگریس زیرقیادت یو پی اے حکومت کی جانب سے بنایا گیا موجودہ قانون بھی موافق کسان نہیں ہے۔ انھوں نے کہا کہ نیا بل کسانوں کو مزید نقصان پہنچائے گا۔ این ڈی اے حکومت تو یو پی اے حکومت کے 2013ء کے قانون سے کافی آگے بڑھ چکی ہے، حالانکہ یہ پہلے ہی موافق کارپوریٹ اور کسانوں اور مالکین اراضی کے مفادات کے مغائر تھا۔ معتمد عمومی نصرت علی کی پریس کانفرنس میں جماعت کی طرف سے مطالبہ کیا گیا کہ مالکین اراضی کی پیشگی منظوری کے فقرہ اور سماجی اثر کے جائزہ کو لازمی بنانا چاہئے اور اس کے علاوہ مارکیٹ شرح پر مناسب معاوضہ کی مالکین اراضی کو لازماً ادائیگی ہونی چاہئے۔ پریس کانفرنس میں قومی معتمدین محمد سلیم انجینئر، اعجاز احمد اسلم اور محمد احمد بھی تھے۔

TOPPOPULARRECENT