Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / حضرت امام حسینؓ کی عظیم قربانی تا قیامت رہنمائی

حضرت امام حسینؓ کی عظیم قربانی تا قیامت رہنمائی

مسجد اختری میں جلسہ ، مفتی غلام آسی ، مفتی زبیر ہاشمی ، مولانا متین پاشاہ قادری کا خطاب
حیدرآباد ۔ 13 ۔ اکٹوبر : ( پریس نوٹ ) : حضرت امام حسینؓ بزم انسانیت کے روشن چراغ ہیں ۔ واقعہ کربلا کو گزرے 14 سو سال ہوگیا مگر آج بھی یہ زندہ جاوید ہے ۔ امام عالی مقامؓ کی عظیم قربانی قیامت تک انسانیت کی رہنمائی کرتے رہے گی ۔ آپؓ کی قربانی نامساعد حالات کے باوجود حق کے لیے باطل طاقتوں کے خلاف ڈٹ جانے کا درس دیتی ہے ۔ آپؓ نے اپنے اہل بیت و اصحاب کی قربانی دے کر اسلام کو زندہ کیا ۔ ان خیالات کا اظہار مولانا مفتی غلام آسی مصباحی (فاضل جامعہ اشرفیہ مبارکپور ) نے کل انتظامی کمیٹی مسجد اختری محلہ دلاور شاہ نگر قلعہ گولکنڈہ میں منعقدہ سالانہ مرکزی جلسہ شہادت حضرت امام حسینؓ کے کثیر اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ جلسہ کا آغاز قاری سید نور محمد شاہ قادری کی قرات کلام پاک سے ہوا ۔ سید دلاور علی شاہ قادری بلال ، میر فاروق علی ظہیر عبدالرشید ارشد نے نعت سنائی ۔ قاری محمد معز الدین فراز ، قاری سید نور علی شاہ قادری ، قاری غلام محمد عامری نے منقبت سنائی ۔ جناب سید مظہر الدین یوسف نے جلسہ کی نگرانی کی ۔ مولانا حافظ و قاری سید زبیر ہاشمی ( استاذ جامعہ نظامیہ ) نے کہا کہ کربلا حق و باطل کی جنگ خیر و شر کا معرکہ نیکی و بدی کی کشمکش کا تاب ناک مظہر ہے ۔ یہ ایسی نورانی مشعل ہے جو راہ صداقت کی طرف ہماری رہنمائی کرتی ہے ۔ جس کو کوئی ذی شعور انسان ہرگز فراموش نہیں کرسکتا ۔ امام حسینؓ نے حق پر ثابت رہتے ہوئے جس طرح فسق و فجور کا مقابلہ کیا اور آنے والی نسلوں کے لیے عزم و ہمت کی بے نظیر مثال قائم کی ۔ مولانا قاری سید متین علی شاہ قادری ناظم اعلیٰ مدرسہ رحمت العلوم و صدر آل انڈیا قرات اکیڈیمی نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ حضرت امام حسینؓ نے دین اسلام کی بقا کے لیے اپنا سب کچھ قربان کردیا ۔ صبر ، استقامت ، زہد و تقویٰ کی ایسی مثال قائم کی جس کی نظیر تاریخ میں نہیں ملتی ۔ حضرت امام حسینؓ نے حق و باطل کا فرق واضح کیا اور باطل کے سامنے ڈٹ جانے کا درس دیا ۔ آپؓ نے جہاد اور نماز ایسا حسین امتزاج قائم کیا جسے اختیار کر کے مسلمان دنیا و آخرت میں سرخرو ہوسکتے ہیں ۔ انہوں نے نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ حضرت امام حسینؓ کی تعلیمات کا مطالعہ کریں ۔ اس موقع پر جناب ایم اے مجیب صدر بزم رحمت عالم نے بحیثیت مہمان خصوصی شرکت کی ۔ آخر میں قاری محمد محبوب نے دعا عاشورہ پڑھائی اور سلام بحضور خیرالانام و سید الشھداء و دعا سلامتی پر جلسہ کا اختتام عمل میں آیا ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT