Friday , June 22 2018
Home / مذہبی صفحہ / حضرت سید صاحب حسنی حسینی قادری حسینیؔ قدس سرہ

حضرت سید صاحب حسنی حسینی قادری حسینیؔ قدس سرہ

سیدمصطفی سعیدقادری

سیدمصطفی سعیدقادری

یوں تو علاقہ دکن میں بے شمار اولیاء اللہ آسمان ولایت پر اپنی روشنی بکھیرتے رہے، جس کی وجہ سے سرزمین دکن کی شان اور قدرمیں کافی اضافہ ہوا۔ لیکن جس ستارے کو ۲۸ واسطوں سے تاجدار اولیاء حضور غوث اعظم سیدنا شیخ عبدالقادر جیلانی پیران پیر رضی اللہ عنہ کے پوتے ہونے کا شرف حاصل ہے اور جس نے ۱۲۱۹ھ میں بمقام قصبہ ٹیکمال ضلع میدک حضرت سید عبدالرزاق قادری رحمۃ اللہ علیہ کے گھر آنکھ کھولی اور جس کا مادۂ تاریخِ ولادت ’’ظہور حق‘‘ ہو، وہ یقینا آگے چل کر عالم کو منور کئے بغیر کیسے رہ سکتا تھا۔
سردار اولیاء کے اس چشم و چراغ کا نام حضرت سید صاحب حسنی حسینی قادری حسینیؔ علیہ الرحمہ ہے، جو علم و فضل، تقویٰ و پرہیزگاری اور خدمت خلق کے حوالے سے کافی مشہور ہوئے۔ اس زمانہ کی ضرورت کے پیش نظر حضرت ممدوح نے ٹیکمال و اطراف کے عوام کی سہولت کی خاطر کئی کنویں کھدوائے۔ ۱۸۲۷ء میں قصبہ ٹیکمال میں مسجد کی بنیاد ڈالی، جو آج بھی ضلع میدک کی بڑی مساجد میں شمار ہوتی ہے۔

حضرت کی تصانیف میں (۱) مثنوی شاہد اذکار (۲) شاہد الوجود (۳) شواہد حسینی (۴) نکات شاہدی(۵) مکتوب حسینی (۶) فرہنگ حسینی قابل ذکر ہیں، جن میں سے بعض منظوم اور بعض نثر میں ہیں۔حضرت کے ایک نبیری زادہ مولانا قاضی سیدشاہ اعظم علی صوفی قادری، جو اس وقت خانوادہ کی واحد بزرگ شخصیت ہیں،کی دینی و علمی خدمات کا ہر کوئی معترف ہے۔ حضرت اقدس کی فارسی تصانیف ’’شاہد الوجود‘‘ اور ’’شاہد اذکار‘‘ کا اردو ترجمہ حضرت قاضی صوفی صاحب قبلہ نے ہی کیا ہے، نیز تاریخی کتاب ’’مقدس ٹیکمال‘‘ کی تصنیف بھی آپ ہی نے فرمائی۔
المختصر حضرت ممدوح بلا لحاظ فرقہ و مذہب عوامی زندگی میں محبت سے انقلاب لانے والے ایک ایسے روحانی پیشوا اور مصلح قوم ثابت ہوئے کہ آپ کی خدمات کو کبھی فراموش نہیں کیا جا سکتا اور آپ کی مبارک زندگی آنے والی نسلوں کے لئے ایک سرچشمۂ فیضان اور مشعلِ ہدایت ثابت ہوگی۔
۷۸ برس کی عمر میں بتاریخ ۲۶؍محرم ۱۲۹۷ہجری م ۱۸۸۰ء بمقام ٹیکمال آپ نے وصال فرمایا۔ مادۂ تاریخ وصال ’’یاغفور‘‘ ہے۔ ہر سال کی طرح اس سال بھی متولی و سجادہ مولاناسید شاہ احمد نور اللہ حسنی حسینی قادری کی نگرانی میں آپ کا ۱۳۹ واں عرس شریف ۲۶؍ اور ۲۷؍ محرم الحرام کو بڑے تزک و احتشام کے ساتھ منایا گیا۔

TOPPOPULARRECENT