Tuesday , December 11 2018

حضور نظام کے یوم وفات کو محسن تلنگانہ / دکن منانے کی اپیل

حیدرآباد ۔ 8 ۔ ستمبر : ( فیاکس ) : اب جب کہ تلنگانہ تحریک کو پچاس سال کی جدوجہد کے بعد تعبیر ملی ہے ۔ ایسے میں حضور نظام مرحوم کو اپنوں کی جانب سے اگر خراج پیش کیا جائے اور انکے یوم وفات کو اگر محسن تلنگانہ / دکن کے نام سے منایا جائے تو دیگر طبقات جو حضور نظام کے کارناموں سے عدم واقفیت کی بنا منفی پہلو رکھتے ہیں اسکو مثبت رخ دیا جاسکتا ہے ۔تاریخ شاہد ہے کہ اگر آج دکن کی دنیا میں پہچان ہے تو وہ حضور نظام کی ہمہ جہت ترقیاتی کارناموں کی وجہ سے ہے عثمانیہ یونیورسٹی ، سٹی کالج ، نظام ساگر ، علی ساگر ، عثمان ساگر ، حمایت ساگر ، ناگر جنا ساگر ‘عثمانیہ ہاسپٹل ، نمس ، چارمینار دواخانہ ، نظام شوگر فیکٹری ‘اسمبلی ، فلک نما ، خلوت ، کنگ کوٹھی ، ان کو محسن تلنگانہ کے طور پر یاد کرنے کافی نہیں ہیں ۔ حکومت کو یوم وفات محسن تلنگانہ منانا چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT