Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / حلب میں ہزاروں افراد شدید سردی میں مدد کے منتظر

حلب میں ہزاروں افراد شدید سردی میں مدد کے منتظر

دو دیہاتوں سے تخلیہ بحال کرنے نیا معاہدہ ، حزب اللہ پر رکاوٹ کھڑی کرنے کا الزام

بیروت ۔ 17 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : شمال مغربی شام کے سرکاری زیر کنٹرول دو شیعہ دیہاتوں میں پھنسے افراد کو انسانی بنیادوں پر جانے کی اجازت دینے کے لیے آج ایک معاہدہ طئے پایا ۔ چنانچہ ایک دن کے تعطل کے بعد مشرقی حلب سے عام شہریوں اور باغیوں کے تخلیہ کا احیاء ہوسکتا ہے ۔ حزب اللہ کے میڈیا شاخ اور نگرانکار گروپ نے آج یہ بات بتائی ۔ اپوزیشن کے برطانوی حقوق انسانی نگرانکار گروپ نے کہا کہ دو دیہاتوں فوا اور کفریا سے تقریبا 4000 افراد بشمول زخمیوں کے تخلیہ کا کام شروع ہونے کی توقع ہے ۔

بتایا گیا کہ 29 بسیں اس دیہات میں پہنچ رہی ہیں اور صرف 400 افراد کے تخلیہ کی اجازت دی گئی ہے ۔ یہ فوری طور پر معلوم نہ ہوسکا کہ تخلیہ کرنے والے افراد کی حد یہاں موجود باغیوں نے یا کسی اور نے مقرر کی ہے ۔ حزب اللہ کے جنگجو اس لڑائی میں صدر بشاالاسد کی فوج کے ساتھ شامل ہوگئے ہیں ۔ اپوزیشن کارکنوں نے لبنان کے اس گروپ پر جنوبی حلب کی شاہراہ پر رکاوٹ کھڑی کرنے اور باغیوں کے زیر کنٹرول شہر کے مشرقی پڑوسی علاقوں سے تخلیہ میں رکاوٹ ڈالنے کا الزام عائد کیا ہے ۔ حلب کے تخلیہ کا عمل کل اس وقت روکدیا گیا جب ایک کراسنگ پر فریقین میں لڑائی چھڑ گئی اور قافلہ پر گولیاں چلانے کا واقعہ پیش آیا ۔ اس سے پہلے ہزاروں افراد کا تخلیہ کیا جاچکا تھا ۔ اپوزیشن ارکان نے کل ایک ویڈیو پوسٹ کیا جس میں دکھایا گیا کہ ہزاروں مرد ، خواتین اور بچے کراسنگ پوائنٹ پر فائرنگ کی زد میں آنے سے بچنے کے لیے دوڑ رہے ہیں ۔

حکومت شام کا یہ کہنا ہے کہ دیہاتوں کا تخلیہ اور مشرقی حلب کے تخلیہ کا کام یکے بعد دیگرے ہونا چاہئے جب کہ باغیوں کا یہ موقف ہیکہ ان دونوں کا ایک دوسرے سے کوئی تعلق نہیں ۔ حزب اللہ کے فوجی شعبہ نے کہا کہ نئے معاہدہ میں باغیوں کے زیر قبضہ مدایا اور زبدانی کو بھی شامل کیا گیا ہے جو لبنان کی سرحد کے قریب واقع ہیں اور یہاں ہزاروں افراد کا سرکاری فورس اور لبنان کے گروپ نے محاصرہ کر رکھا ہے ۔ شام کے سرکاری ٹیلی ویژن نمائندہ نے حلب سے بتایا کہ آج طئے پائے معاہدہ میں فوا اور کفریا کے عوام کے تخلیہ کا عمل بحال کرنا ہے ۔ انٹرنیشنل کمیٹی آف ریڈکراس نے بتایا کہ ہزاروں افراد بشمول خواتین ، بچے ، بیمار اور زخمی اب بھی مشرقی حلب میں پھنسے ہوئے ہیں اور سخت سردی میں جہاں درجہ حرارت نقطہ انجماد کو پہنچ گیا ۔ تخلیہ کا عمل بحال ہونے کا انتظار کررہے ہیں ۔ شام میں ریڈکراس وفد کے سربراہ میرین گیسر نے جو اس وقت حلب میں ہیں کہا کہ ہم تخلیہ کا عمل جلد شروع کرنے کے لیے پوری طرح تیار ہیں ۔ لیکن تمام فریقین کو یہ کام جاری رکھنے کی طمانیت دینی چاہئے ۔۔

پلمائراشہر پرامریکہ کے فضائی حملے
واشنگٹن، 17 دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کی قیادت والی اتحاد فوج نے شامی شہر پلمائرا پر اسلامی اسٹیٹ (آئی ایس) کو نشانہ بنا کر فضائی حملے کئے ہیں۔فوج نے ایک بیان جاری کر کے کل بتایا کہ اس فضائی حملے میں دہشت گردوں کے 14 ٹینکوں کو منہدم کیا گیا اور ہتھیاروں کے ذخائر کو تباہ کیا گیا ہے ۔ اس ماہ آئی ایس نے پلمائرا پر قبضہ کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ امریکی فوج کی جانب سے دہشت گردوں کے حملے کی وارننگ کے بعد آئی ایس کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے ۔

 

حلب پر حکومت کے کنٹرول کے بعد امن ممکن : روس
ماسکو، 17 دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) روس نے کہا کہ مشرقی حلب پر شامی حکومت کا مکمل کنٹرول ہونے کے بعد لڑائی ختم ہوکر امن کے عمل کو بحال کرنے کا موقع ملے گا۔روس کی وزارت دفاع کے ایک اہلکار سرجئی روڈسکوئی نے کہا کہ تمام شہری اور زیادہ تر باغی جنگجو باغیوں کے کنٹرول والے اضلاع سے باہر آ چکے ہیں اور 3400 سے زیادہ باغیوں نے فوج کے سامنے ہتھیار ڈال دئے ہیں۔روس کے صدر بلادمر پوتن نے جاپان کے دورے کے دوران کل کہا کہ انہوں نے اور ترکی کے صدر طیب اردغان نے امریکہ اور اقوام متحدہ کو شامل کئے بغیر شام میں امن کی بحالی کے لئے منصوبہ بندی بنائی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT