Saturday , November 18 2017
Home / Top Stories / حلف برداری تقریب میں عوام کی ضرورت : ٹرمپ

حلف برداری تقریب میں عوام کی ضرورت : ٹرمپ

واشنگٹن ۔ 23 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) نومنتخبہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے آج ایک اہم اور چبھتا ہوا بیان دیتے ہوئے کہا کہ 20 جنوری کو ان کی حلف برداری کی تقریب کے موقع پر انہیں عوام کی موجودگی کی ضرورت ہے۔ وہ نہیں چاہتے کہ ان کی تقریب حلف برداری میں مشہور و معروف ہستیاں موجود ہوں۔ یاد رہیکہ 20 جنوری 2017ء کو ڈونالڈ ٹرمپ امریکہ کے 45 ویں صدر کی حیثیت سے حلف لیں گے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ دلچسپ ہوگا کہ ٹرمپ کا یہ بیان ایک ایسے پس منظر میں دیا گیا ہے جب یہ خبریں گشت کررہی تھیں کہ ٹرمپ کی حلف برداری تقریب میں امریکہ کی کئی مشہور و معروف ہستیوں نے اپنے فن کا مظاہرہ کرنے سے انکار کردیا ہے۔ ٹرمپ نے ٹوئیٹ کرتے ہوئے کہا کہ نام نہاد ’’اول‘‘ درجہ کی مشہور و معروف ہستیاں جو تقریب کا حصہ بننا نہیں چاہتیں انہوں نے میری  حریف ہلاری کلنٹن کیلئے بھی کچھ نہیں کیا۔ بہرحال مجھے ’’عوام‘‘ کی ضرورت ہے ’’خواص‘‘ کی نہیں۔ نیویارک ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق ایلٹن جان اب حلف برداری تقریب میں شریک نہیں ہوں گے۔ اسی طرح کانییے ویسٹ جس نے جاریہ ماہ کے اوائل میں ٹرمپ ٹاور میں اپنی ایک جھلک دکھائی تھی، اس نے بھی شرکت سے معذرت خواہی کرلی ہے۔ دریں اثناء صدارتی افتتاحی کمیٹی کے ترجمان کورس ایفیٹین نے میڈیا کو بتایا کہ ریڈیو سٹی راکیٹس حلف برداری تقریب میں اپنے فن کا مظاہرہ کریں گے۔

 

ٹرمپ کی مصر کے صدر سے بات چیت
واشنگٹن،23دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے نومنتخب صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے مشرق وسطیٰ میں امن کی بحالی کے سلسلے میں صدر عبدالفتح السیسی سے فون پر بات چیت کی۔مسٹر ٹرمپ کی ٹیم کے ایک افسر نے بتایا کہ فون پر دونوں رہنماؤں کے درمیان مشرق وسطیٰ میں امن کی بحالی کے سلسلے میں بات چیت کی گئی۔امریکی افسر نے بتایا کہ مسٹر ٹرمپ اور مسٹر سیسی کے درمیان سلامتی کونسل میں اسرائیل سے متعلق ایک تجویز پر ہونے والی ووٹنگ کے سلسلے میں بات چیت ہوئی یانہیں اس کی اسے اطلاع نہیں ہے ۔اس سے پہلے مصر کے صدر عبدالفتح السیسی نے مصر کے اقوام متحدہ مشن کو حکم دے کر اقوام متحدہ سلامتی کونسل میں اسرائیل سے متعلق ایک تجویز پر ہونے والی ووٹنگ کو ملتوی کرنے کے لئے کہا ہے ۔
اس تجویز میں اسرائیل کی جانب سے قبضہ کئے گئے فلسطینی علاقے کو خالی کرنے اور وہاں جاری دیگر سرگرمیوں کو فوراً ختم کرنے کا مطالبہ کیا گیاہے ۔

TOPPOPULARRECENT