Saturday , December 15 2018

حلقہ اسمبلی گجویل سے کے سی آر کا مقابلہ

پارلیمانی حلقہ پر تجسس برقرار

پارلیمانی حلقہ پر تجسس برقرار

حیدرآباد۔ 23؍مارچ (سیاست نیوز)۔ صدر تلنگانہ راشٹرا سمیتی مسٹر کے چندر شیکھر راؤ گجویل اسمبلی حلقہ سے ہی انتخابات میں حصہ لیں گے۔ انھوں نے پریس کانفرنس کے دوران آج یہ بات واضح کردی ہے۔ پارلیمانی انتخابی نشست کے متعلق کئے گئے سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس انتخابی کمیٹی اس بات کا فیصلہ کرے گی کہ انھیں کس پارلیمانی حلقہ سے انتخابات میں حصہ لینا چاہئے؟ مسٹر چندر شیکھر راؤ نے بتایا کہ 11 اپریل کے بعد وہ انتخابی مہم کا آغازکریں گے۔ انھوں نے مزید کہا کہ کئی لوگ جو ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرنے کے خواہشمند ہیں، انھیں ٹی آر ایس جگہ دینے کی متحمل نہیں ہے، لیکن اس کے باوجود بات چیت کے دور جاری ہیں۔

مسٹر چندر شیکھر راؤ نے بتایا کہ کرن کمار ریڈی کے دور حکومت کے آخری دنوں میں دی گئی پراجکٹس کو منظوری کے سلسلہ میں تحقیقات کے لئے انھوں نے گورنر آندھرا پردیش کو مکتوب روانہ کیا ہے۔ صدر ٹی آر ایس نے گجویل حلقہ اسمبلی سے انتخابات میں حصہ لینے کی توثیق کرتے ہوئے بالواسطہ طور پر یہ بھی واضح کردیا کہ وہ نہ صرف اسمبلی کی رکنیت کیلئے مقابلہ کریں گے بلکہ پارلیمانی حلقہ سے بھی عام انتخابات میں حصہ لیں گے۔ذرائع کے مطابق ٹی آر ایس کے صدر جو فی الحال محبوب نگر کے رکن لوک سبھا ہیں اور توقع ہے کہ حلقے لوک سبھا میدک سے بھی مقابلہ کریں گے ۔ یہ نشست فی الحال ٹی آر ایس کی باغی رکن پارلیمنٹ وجئے شانتی کے قبضہ میں ہے جو حال ہی میں کانگریس میں شامل ہوئی ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT