Sunday , January 21 2018
Home / شہر کی خبریں / حلقہ پارلیمنٹ میدک میں اصل مقابلہ کانگریس اور ٹی آر ایس کے درمیان

حلقہ پارلیمنٹ میدک میں اصل مقابلہ کانگریس اور ٹی آر ایس کے درمیان

کانگریس امیدوار سنیتا لکشما ریڈی اور پنالہ لکشمیا سے سونیا گاندھی کی فون پر بات چیت

کانگریس امیدوار سنیتا لکشما ریڈی اور پنالہ لکشمیا سے سونیا گاندھی کی فون پر بات چیت
حیدرآباد /29 اگست (سیاست نیوز) صدر کانگریس سونیا گاندھی نے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس پنالہ لکشمیا اور مسز سنیتا لکشما ریڈی کو ٹیلیفون کرتے ہوئے حلقہ لوک سبھا میدک کے انتخابی مہم پر تبادلہ خیال کیا۔ واضح رہے کہ حلقہ لوک سبھا میدک کے ضمنی انتخاب میں اصل مقابلہ ٹی آر ایس اور کانگریس کے درمیان ہے، جب کہ بی جے پی نے لمحہ آخر میں کانگریس قائد جگا ریڈی کو انتخابی مہم میں اتارا، جن کی تلگودیشم مکمل تائید کر رہی ہے۔ مسز گاندھی نے کانگریس امیدوار سنیتا لکشما ریڈی سے ٹیلیفون پر بات چیت کرتے ہوئے انتخابی مہم کے دوران عوام سے ملنے اور کامیابی حاصل کرنے کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ بعد ازاں انھوں نے پنالہ لکشمیا سے بھی ٹیلیفون پر بات چیت کرتے ہوئے کانگریس کی حکمت عملی اور انتخابی مہم پر تبادلہ خیال کیا اور کہا کہ علحدہ تلنگانہ ریاست کانگریس نے تشکیل دی ہے، جب کہ نئی ریاست کی تشکیل میں ٹی آر ایس کا کوئی رول نہیں ہے، لہذا یہ پیغام گھر گھر پہنچ کر عوام تک پہنچایا جائے۔ انھوں نے ٹی آر ایس حکومت کی ناکامیوں کو بھی انتخابی مہم میں شامل کرنے کا مشورہ دیا۔ مسز گاندھی نے متحد ہوکر انتخابی مہم چلانے کے لئے کانگریس قائدین پر زور دیا۔ دریں اثناء مسز سنیتا لکشما ریڈی نے کہا کہ حکومت کی کار کردگی مایوس کن ہے، انھیں یقین ہے کہ وہ بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کریں گی اور اپنی کامیابی کا تحفہ مسز سونیا گاندھی کو پیش کریں گی۔ اسی دوران پنالہ لکشمیا نے کہا کہ ٹی آر ایس انتخابی منشور میں کئے گئے وعدوں کو پورا کرنے میں ناکام ہو گئی ہے۔ کسان، طلبہ اور ملازمین پریشان ہیں، حکومت انھیں اعتماد میں لینے میں ناکام ہو گئی ہے۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی انتخابی مہم کی حکمت عملی تیار کرچکی ہے، جس کا بہت جلد اعلان کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT