Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت، ہیلمٹ تیار ساز کمپنیوں کی ایجنٹ

حکومت، ہیلمٹ تیار ساز کمپنیوں کی ایجنٹ

ڈاکٹر چناریڈی کے نظریہ پر عمل آوری ضروری ، کے سی آر کو فیصلہ پر نظرثانی کا مطالبہ
حیدرآباد ۔6مارچ(سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میںٹریفک پولیس کا عملہ ہیلمٹ کے لزوم کے نام پر ہیلمٹ تیار کرنے والی کمپنیوں کے ایجنٹ کے طور پر کام کررہا ہے ۔ تلنگانہ ٹو وہیلرس رائڈرس اسوسیشن کے قائدین نے آج یہاں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں یہ الزام ٹریفک پولیس عملے پرلگایا۔ کنونیر اسوسیشن امان اللہ خان نے کہاکہ 1989میں چیف منسٹر ڈاکٹر چنا ریڈی نے ہیلمٹ کے قانون کو سوائے مسافرین کو تکلیف دینے سے زیادہ کچھ اور قرارنہیںدیا تھا اور انہوں نے ہیلمٹ قانون کو کالعدم قراردیتے ہوئے ہیلمٹ کچرے میں پھینک دیا تھا۔ امان اللہ خان نے بتایاکہ اس ضمن میںڈاکٹرچنا ریڈی نے ایک جی او نمبر303کی بھی اجرائی عمل میںلائی تھی جس کو 2005میںعدالت میں چیالنج کرتے ہوئے حکومت کی جی او سے ریاستی حکومت کی دستبرداری کا اعلان کیا گیا۔ انہوں نے کہاکہ ہیلمٹ کے متعلق ڈاکٹر چنا ریڈی کے نظریہ پر عمل آوری درکار ہے ۔ انہوں نے چیف منسٹر تلنگانہ ریاست کے چندرشیکھر رائو سے اس معاملے میںمداخلت کرتے ہوئے ٹووہیلر موٹر سیکل سواروں کو راحت پہنچانے کی اپیل کی ۔ انہو ںنے کہاکہ ہیلمٹ کے نام پر محکمہ ٹریفک پولیس کا عملہ موٹر سیکل سواروں کو غیرضروری ہراسا ں وپریشان کررہا ہے ۔ اس موقع پر جئے رویندر ‘ محمد سلیم الدین ‘ محمد فاروق‘ جئے ومشی کرشنا‘ محمد افسر ‘ محمد جاوید موجو دتھے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT