Monday , September 24 2018
Home / شہر کی خبریں / حکومت ، کمزورطبقات کے جان و مال کے تحفظ میں ناکام

حکومت ، کمزورطبقات کے جان و مال کے تحفظ میں ناکام

بدایوں عصمت ریزی واقعہ اور 24 حیدرآبادی طلباء کی غرقابی پر عام آدمی پارٹی کا احتجاج

بدایوں عصمت ریزی واقعہ اور 24 حیدرآبادی طلباء کی غرقابی پر عام آدمی پارٹی کا احتجاج

حیدرآباد۔10(سیاست نیوز) موجودہ دور میں عظیم جمہوری ہندوستان کی حکمران جماعتیں غریب اور کمزور طبقات کی جان ومال کی حفاظت میں پوری طرح ناکام ہوچکی ہیں۔اتر پردیش میں دلت طبقہ کے لڑکیوں کی عصمت ریزی کے بعد قتل‘ پونے میں مسلم نوجوان کا بیدردانہ قتل اور ہماچل پردیش میں چوبیس طلبہ کا ندی کے پانی میںغرقاب ہونے کے واقعات کے خلاف عام آدمی پارٹی کے خاموش احتجاجی مظاہرے کے موقع پر تاریخی چارمینار کے دامن میں سابق ائی اے ایس و عام آدمی پارٹی قائد چھایہ رتن نے ان خیالات کا اظہارکیا۔ انہوں نے مزید کہاکہ قومی سطح پر خواتین کے ساتھ مظالم کے بڑھتے واقعات کے خلاف عوام میںشعوربیداری کے لئے اس قسم کے احتجاجی پروگراموں کا انعقاد وقت کی اہم ضرورت بنتاجارہا ہے۔ چھایہ رین نے کہاکہ دلت لڑکیوں کے ساتھ بدایوں(اترپردیش) میںعصمت ریزی کے بعد قتل کے خلاف متعلقہ پولیس اسٹیشن میں شکایت کرنے والوں کے ساتھ مقامی پولیس کے رویہ بالخصوص شکایت کرنے والوں سے طبقہ کے متعلق سوال ہندوستان کے جمہوری نظام کے لئے سنگین خطرہ ثابت ہوگا۔انہوں نے کہاکہ قومی سطح پر پولیس کے رویہ میں تبدیلی ضروری ہے۔ انہوں نے طبقہ کی بنیاد پر نشانہ بنانے کے واقعات کی روک تھام کے لئے سنجیدہ جدوجہد کو بھی لازمی قراردیا۔سماجی جہدکار وعام آدمی پارٹی قائدعادل محمد نے اس موقع پر پونے میں محسن شیخ کو بنیاد پرستوں کی جانب سے نشانہ بنائے جانے کے واقعہ کی سختی کے ساتھ مذمت کرتے ہوئے کہاکہ این ڈی اے حکومت میں ڈیزل مہنگا اور خون سستا ہوتا جارہا ہے ۔ انہوں نے مزیدکہاکہ غریب‘ کمزور اور پسماندگی کا شکار طبقات ہر وقت مسائل کاشکار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پونے میں بنیاد پرستوں نے ایک بے قصور نوجوان کو صرف مسلمان ہونے کی بنیاد پر اپنا نشانہ بناتے ہوئے موت کے گھاٹ اتاردیا جبکہ وہ مستقبل میں جمہوری ہندوستان کا قیمتی اثاثہ بن کر ابھر سکتا تھا۔ انہوں نے کہاکہ بنیاد پرست طاقتیں کمزور اور غریب طبقات کا عرصہ حیات تنگ کرنے کاکام کررہے ہیں۔عادل محمد نے کہاکہ این ڈی اے کے اقتدار میںانے کے بعد بنیاد پرست طاقتیں قومی سطح پر محترک ہوگئی ہیں جو ملک کے لئے بڑا خطرہ ہے ۔ انہوں نے مزید کہاکہ بنیاد پرست طاقتوں کے خلاف قومی اور ریاستی حکومت کے ٹھوس اقدامات کمزور اور غریب طبقات کے تحفظ کا ذریعہ بن سکتا ہے۔پروفیسر ویشویشوار رائو نے اس موقع پر کہاکہ نارتھ انڈیا کے بشمول پورے ملک میں چھوٹے بڑے بنیاد پرست تنظیموںکی سرگرمیوں میں تیزی فرقہ پرست طاقتوں کے حفیہ ایجنڈے کو روبعمل لانے کی سازش اس حصہ ہے۔پروفیسر ویشویشوار رائو نے کہاکہ پونے میںمحسن شیخ کے بیدردانہ قتل کے بعد مقامی نوجوانوں میں جو خوف دھشت کا ماحول پیدا ہوا ہے اس کے ذمہ داری مرکزی اور ریاستی انتظامیہ پر عائد ہوگی۔انہوں نے کہاکہ پونے کے علاوہ ہندوستان کے مختلف شہروں میں مسلم نوجوان اپنے دڑاھی منڈوانے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بنیاد پرست طاقتوں پر اگر لگام نھیں لگائی گئی توہندوستان کے حالات یکسر تبدیل ہوجائیںگے۔ انہوں نے مزید کہاکہ آر ایس ایس ‘ بجرنگ دل‘وی ایچ پی‘ ہندوسینا جیسی تنظیمو ںپر فی الفور امتناع عائد کیاجائے ۔عام آدمی پارٹی کے دیگر قائدین بھی اس موقع پرموجود تھے۔بعدازاں عام آدمی پارٹی قائدین نے چارمینار تا گلزار حوض خاموش ریالی بھی نکالی اور آخر میںموم بتیاں سلگاکر ہندوستان بھر میںبنیاد پرستوں کا شکار مہلوکین کو خراج عقیدت بھی پیش کیا۔

TOPPOPULARRECENT