Friday , January 19 2018
Home / شہر کی خبریں / حکومت آندھرا پردیش طلبہ کو فیس باز ادائیگی اسکیم کے عہد کی پابند

حکومت آندھرا پردیش طلبہ کو فیس باز ادائیگی اسکیم کے عہد کی پابند

تلنگانہ میں زیر تعلیم طلبہ کے لیے رہنمایانہ خطوط ، اسمبلی میں آر کشور بابو کا جواب

تلنگانہ میں زیر تعلیم طلبہ کے لیے رہنمایانہ خطوط ، اسمبلی میں آر کشور بابو کا جواب
حیدرآباد۔/19ڈسمبر، ( سیاست نیوز) حکومت آندھرا پردیش ریاست کے تمام طلبہ کو فیس بازادائیگی اسکیم سے فائدہ پہنچانے کے عہد کی پابند ہے۔ ریاستی وزیر سماجی بہبود مسٹر آر کشور بابو نے آج آندھرا پردیش اسمبلی میں وائی ایس آر کانگریس رکن اسمبلی مسٹر انیل کی جانب سے اُٹھائے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ آندھرا پردیش کے ہر طالب علم کو فیس بازادائیگی اسکیم میں شامل رکھنے کے اقدامات کئے جارہے ہیں اور چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو ہر طالب علم کے تعلیمی اخراجات کی بروقت ادائیگی کیلئے سنجیدہ ہیں۔ قبل ازیں مسٹر انیل نے فیس باز ادائیگی اسکیم میں موجود شرائط کا تذکرہ کرتے ہوئے ایوان کو اس بات سے واقف کروایا کہ فیس باز ادائیگی کیلئے جو شرائط عائد کی گئی ہیں ان میں آدھار کارڈ بھی طلب کیا جارہا ہے جس کے سبب طلبہ کو دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے استفسار کیا کہ تلنگانہ میں موجود آندھرا پردیش سے تعلق رکھنے والے طلبہ کیلئے حکومت آندھرا پردیش کی جانب سے کیا اقدامات کئے جارہے ہیں۔ آیا انہیں حکومت آندھرا پردیش کی فیس بازادائیگی اسکیم میں شامل رکھا جارہا ہے یا نہیں۔ مسٹر انیل نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ حکومت تلنگانہ میں تعلیم حاصل کررہے آندھرا پردیش کے طلبہ کیلئے بھی فوری طور پر فیس باز ادائیگی اسکیم میں شامل کرنے کیلئے رہنمایانہ خطوط جاری کرے۔ وائی ایس آر سی پی رکن اسمبلی نے وقفہ سوالات کے دوران اس مسئلہ کو پیش کرتے ہوئے چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جس پر تلگودیشم ارکان اسمبلی نے ہنگامہ آرائی کرتے ہوئے رکن اسمبلی کو خطاب سے روکنے کی کوشش کی۔ اسی دوران دونوں جماعتوں کے ارکان اسمبلی میں الزام و جوابی الزامات کا سلسلہ شروع ہوگیا اور ایک مرتبہ پھر کافی دیر تک ایوان کی کارروائی درہم برہم دیکھی گئی۔

TOPPOPULARRECENT