Wednesday , December 12 2018

حکومت ایک لاکھ ملازمتیں فراہم کرے

مجوزہ احتجاجی ریالی سے دستبرداری کیلئے کودنڈا رام کی شرط
حیدرآباد 14 فروری (سیاست نیوز) صدرنشین تلنگانہ پولٹیکل جوائنٹ ایکشن کمیٹی صدرنشین پروفیسر ایم کودنڈا رام نے بے روزگار تعلیم یافتہ نوجوانوں کی احتجاجی ریالی کے تعلق سے اپنا موقف سخت کرتے ہوئے کہاکہ وہ 22 فروری کو مجوزہ پروگرام سے صرف اسی صورت میں دستبردار ہوں گے جب حکومت ملازمت کی فراہمی کا واضح تیقن دے۔ اُنھوں نے کاکتیہ یونیورسٹی میں طلبہ یونینوں کی مشترکہ مجلس عمل کے زیراہتمام مشاورتی اجلاس میں شرکت کی۔ اِس موقع پر اُنھوں نے کہاکہ ریالی کا انعقاد ہمارے لئے وقار کا مسئلہ نہیں ہے بلکہ بے روزگار تعلیم یافتہ نوجوانوں کو درپیش مشکلات اور اُن میں پائی جانے والی مایوسی کے پیش نظر ہم نے یہ فیصلہ کیا ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ حکومت نے ایک لاکھ ملازمتیں فراہم کرنے کا جو وعدہ کیا تھا اُسے پورا کرنا ہوگا۔ حکومت کی جانب سے واضح تیقن نہ ملنے کی صورت میں 22 فروری کو طے شدہ پروگرام کے مطابق بڑے پیمانہ پر احتجاجی ریالی منظم کی جائے گی اور کسی طرح کی رکاوٹوں کے خلاف انتباہ دیا۔ پروفیسر کودنڈا رام نے بے روزگار تعلیم یافتہ نوجوانوں اور تلنگانہ کے مختلف شعبہ حیات سے تعلق رکھنے والوں سے مجوزہ ریالی میں شرکت اور اِسے کامیاب بنانے کی اپیل کی۔(ابتدائی خبر صفحہ 2 پر)

TOPPOPULARRECENT