Monday , December 18 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت تلنگانہ سے اقلیتوں کی ترقی کے لئے اقدامات پر وہائٹ پیپر جاری کرنے کا مطالبہ

حکومت تلنگانہ سے اقلیتوں کی ترقی کے لئے اقدامات پر وہائٹ پیپر جاری کرنے کا مطالبہ

ٹی آر ایس کا مختصر دور حکومت مایوس کن، صدر تلنگانہ پی سی سی اقلیت ڈپارٹمنٹ کا بیان
حیدرآباد /7 اگست (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ محمد خواجہ فخر الدین نے ٹی آر ایس دور حکومت میں بجٹ کی اجرائی اور اقلیتوں کی ترقی کے لئے کئے گئے اقدامات پر وہائٹ پیپر جاری کرنے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے مطالبہ کیا۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کے انتخابی منشور میں اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کی ترقی کے لئے ڈھیر سارے وعدے کئے گئے، تاہم ٹی آر ایس کا 14 ماہی دور اقتدار اقلیتوں کے لئے مایوس کن رہا۔ انھوں نے کہا کہ تلنگانہ میں اقلیتی بہبود کا کوئی وزیر نہیں ہے، اس قلمدان کو چیف منسٹر نے اپنے پاس رکھا ہے، جب کہ چیف منسٹر نے اقلیتوں کی ترقی کو نظرانداز کرکے ان کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ انھوں نے بتایا کہ گزشتہ سال منظورہ ایک ہزار کروڑ کے بجٹ میں صرف 600 کروڑ روپئے جاری کئے گئے اور جاریہ سال کے 1104 کروڑ کے بجٹ میں پہلے سہ ماہی میں صرف 180 کروڑ روپئے جاری کئے گئے، جب کہ بینکوں سے قرض کی اجرائی کے لئے 51 کروڑ روپئے اب تک جاری نہیں کئے گئے، جس کی وجہ سے بینکس اقلیتوں کو قرضہ جات کی اجرائی میں ٹال مٹول کی پالیسی اپنا رہے ہیں۔ اسی طرح شادی مبارک اسکیم کی درخواستوں پر کوئی سنوائی نہیں ہے اور فیس باز ادائیگی وقت پر نہ ہونے کے سبب طلبہ اور ان کے سرپرستوں کو کئی مسائل سے دو چار ہونا پڑ رہا ہے، جب کہ حکومت ہر سال نئی نئی شرائط لاگو کرکے اقلیتوں کو اعلی تعلیم سے روکنے کی سازش کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ غریب مسلم لڑکیوں کی شادیوں کے لئے امداد اور ریسیڈنشل اسکولوں کا قیام کانگریس کا کارنامہ ہے، لیکن ٹی آر ایس حکومت اس کا سہرا اپنے سر باندھ رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کے اعلان پر عمل آوری سے قبل ہی حکومت نے 15 ہزار سرکاری ملازمتوں پر تقررات کا اعلان کردیا ہے، جس سے مسلمان بڑے پیمانے پر ملازمتوں سے محروم ہو جائیں گے۔ انھوں نے کہا کہ حکومت کی نیت میں کھوٹ ہے، چیف منسٹر تلنگانہ صرف جھوٹے وعدے کرکے مسلمانوں کو ہتھیلی میں جنت دکھا رہے ہیں، جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت صرف 14 ماہ میں عوام بالخصوص اقلیتوں کی تائید سے محروم ہو گئی ہے۔ گریٹر میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں اقلیتیں ٹی آر ایس کو سبق سکھائیں گی۔

TOPPOPULARRECENT