حکومت تلنگانہ سے مذہبی سہولتوں کی فراہمی

حامد محمد خاں امیر حلقہ جماعت اسلامی ہند تلنگانہ و اوڈیشہ کا بیان

حامد محمد خاں امیر حلقہ جماعت اسلامی ہند تلنگانہ و اوڈیشہ کا بیان
حیدرآباد ۔ 4 ۔ جولائی : ( پریس نوٹ ) : ریاست تلنگانہ کے چیف منسٹر جناب کے چندر شیکھر راؤ نے ماہ رمضان المبارک کی مناسبت سے مساجد میں افطار و طعام وغیرہ کے انتظامات و نیز مساجد میں مصلیوں کے لیے سہولتیں فراہم کی ہیں ۔ ان سب بھلائی اور نیکی کے کاموں میں حکومت کا تعاون درست ہے لیکن اقلیتوں کی فلاح و بہبود کے لیے مختلف اسکیمات کے ذریعہ عوام کی ترقی اور خاص کر مسلمانوں کی معاشی پسماندگی کو دور کرنے حکومتی اسکیمات کی اشد ضرورت ہے تاکہ جو وعدے انہوں نے کیے ہیں وہ پورے ہوں ۔ اسی کے ساتھ ساتھ یہ اعلان بھی کیا گیا ہے کہ مساجد کے پیش اماموں اور موذنوں کی تنخواہوں کو بھی حکومت ادا کرے گی ۔ اماموں اور موذنوں کی تنخواہوں کے معاملہ میں یہ اقدام درست ہے لیکن اسے راست وقف بورڈ کے حوالے کیا جائے ، تاکہ اوقاف ہی سے مساجد کے ذمہ داران کو تنخواہیں ادا کی جاسکیں ۔ مستقبل میں اس میں مزید اضافہ و ترقی ممکن ہوسکے ۔ اسی طرح مسلمانوں کی معاشی پسماندگی کو دور کرنے کی خاطر انہوں نے 12 فیصد ریزرویشن دینے کا وعدہ کیا تھا ۔ اسے تمام فلاحی اسکیمات میں جاری کرنا چاہئے ۔ حکومت تلنگانہ ان اقدامات کو شروع نہ کرے گی تو مذہبی سہولتوں کی فراہمی کی کوئی اہمیت نہ رہ جائے گی اور نہ ان سے اقلیتوں کی حقیقی ترقی و بہی خواہی ظاہر ہوگی ۔۔

TOPPOPULARRECENT